اپوزیشن کی غیر موجودگی میں "کے پی "کا بجٹ پاس

اپوزیشن کی غیر موجودگی میں


پشاور(24نیوز) خیبر پختونخوا اسمبلی کا اجلاس، اپوزیشن اراکین کی غیر موجودگی میں 855 ارب کا بجٹ پاس کردیاجس پر اپوزیشن اراکین کی جانب سے شدید احتجاج کیا گیا.

خیبر پختونخوا اسمبلی کا اچلاس سپیکر مشتاق غنی کی صدارت میں شروع ہوا تو کٹ موشنز پیش کیے گئے، اپوزیشن اراکین اسمبلی تاخیر سے آنے کے باعث محکمہ ترقی و منصوبہ بندی، آئی ٹی، ریونیو اور محاصل و ابکاری کے مطالبات زر منظور جس کے بعد سپیکر نے تمام تحاریک کٹوتی کو ختم کرنے کے لے اسمبلی سے اجازت لے لی۔مطالبات زر قواعد سے ختم کرنے اور آئندہ مالی سال کا 855 ارب روپے کا بجٹ کثرت رائے سے منظور کر لیا گیا جس پر اپوزیشن اراکین نے اسپیکر ڈیسک کا گھیراو کیا اور اسپیکر کے خلاف نعری بازی کی اور ایجنڈے کی کاپیاں بھی پھاڑ دی۔

اسمبلی اجلاس سے اظہار خیال کے دوران وزیر اعلی خیبر پختونخوا محمود خان نے سپیشل پولیس فورس کے مستقل ہونے اور اسمبلی سٹاف کو تین ماہ کی اعزازی تنخواہیں دیے کا بھی اعلان کیا.

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔