ووٹ دو بجلی لو،ن لیگ کی نئی پالیسی سامنے آگئی


اسلام آباد(24نیوز) ن لیگ کے نعرے صرف ن لیگ تک ہی محدود، لیگی حکومت نے صرف ن لیگ کوبجلی کی لوڈشیڈنگ سے مستثنیٰ قراردینے کافیصلہ کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق حکمرانوں نے جلسوں میں کئے تھے 2018میں لوڈ شیڈنگ ختم کرنے کے بلند و بانگ دعوے لیکن ہونے جارہا ہے بالکل اس کے برخلاف۔

شہریوں کو اگر بجلی کی بلا تعطل فراہمی درکار ہے تو ن لیگ میں شمولیت کا اعلان کر دیں کیونکہ لیگی ووٹرز کیلئے خوشخبری ہے کہ ان گھروں میں لوڈشیڈنگ نہیں ہوگی۔ حکومت لوڈشیڈنگ پر قابو تو پا نہ سکی لیکن اپنے ووٹرز کو ریلیف ضرور دے گی۔

پاورڈویژن ذرائع کے مطابق مسلم لیگ ن کے ووٹ بینک والے علاقوں میں لوڈ شیڈنگ نہیں ہوگی۔لاہور سمیت قصور،ساہیوال، شیخوپورہ ،گوجرانوالہ کے علاوہ فیصل آباد اور سیالکوٹ کے بیشترز فیڈرز پر بھی لوڈ شیڈنگ نہ کرنے کی منصوبہ بندی کر لی گئی ہے۔

یہ بھی ضرور پڑھیں:پنجاب کے سرکاری سکولوں میں بڑے پیمانے پر گھپلوں کا انکشاف 

 دوسری جانب سندھ اوربلوچستان کے علاوہ خیبرپختونخوا کے بیشترز علاقوں میں گھنٹوں لوڈ شیڈنگ جاری رہے گی۔جن علاقوں میں بجلی چوری ہوتی ہے وہاں 16گھنٹے تک لوڈ شیڈنگ کرنے کا فیصلہ کیا گیا ۔رمضان المبارک میں بجلی کی بلا تعطل فراہمی کیلئے بیک اپ ٹرانسفارمرز کا منصوبہ بھی زیر غور ہے۔