ڈی جی عابد جاوید کا ڈپٹی چیئرمین نیب بننے کا خواب ادھورا رہ گیا

ڈی جی عابد جاوید کا ڈپٹی چیئرمین نیب بننے کا خواب ادھورا رہ گیا


اسلام آباد(24نیوز) ڈی جی نیب کوئٹہ عابد جاوید کی اعلیٰ افسروں سےملاقاتوں اورخفیہ رابطوں کا چیئرمین جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال نے نوٹس لے لیا، ڈی جی کوئٹہ کی حیثیت مشکوک اور متنازعہ ہونے پر انکا نام ڈپٹی چیئرمین نیب کی فہرست میں شامل نہ کرنے فیصلہ کیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق ڈی جی ڈی جی نیب کوئٹہ عابد جاوید کی اعلیٰ افسروں سےملاقاتوں اورخفیہ رابطوں کا نوٹس لیتے ہو ئے چیئرمین جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال نےان کا نام ڈپٹی چیئرمین نیب کی فہرست میں شامل نہ کرنے فیصلہ کیا گیا،  ذرائع کا کہنا تھا کہ ڈی جی عابد جاوید کوڈپٹی چیئرمین نیب کی فہرست سے باہر نکال دیا گیا ۔

نیب ذرائع کے مطابق ڈی جی کوئٹہ کی حیثیت مشکوک اور متنازعہ ہونے  پر یہ فیصلہ کیا گیا،  چیئرمین نیب نے ڈی جی عابد جاوید کے مختلف اعلیٰ شخصیات سے خفیہ رابطوں کی تفصیلات بھی طلب کرلیں، ڈی جی کوئٹہ کے خلاف الزام ہے کہ انہوں نے پابندی کے باوجود پرویز خٹک، گورنر بلوچستان،  پرنسپل سیکریٹری ٹو پی ایم اور ایک ریٹائرڈ جسٹس سے ملاقاتیں کی۔ 

ضرور پڑھیں:انکشاف 16 جون 2019

ڈی جی کوئٹہ نے کرپشن اور بدعنوانی کے الزامات میں نیب کو مطلوب ملزمان سے خفیہ ملاقاتیں کرکے اپنے عہدے اور نیب ضابطہ اخلاق کی سنگین خلاف ورزی کی ہے۔

M.SAJID KHAN

CONTENT WRITER