خیبر پختونخوا،سینیٹ کے ضمنی انتخابات میں پی ٹی آئی نے میدان مارلیا

خیبر پختونخوا،سینیٹ کے ضمنی انتخابات میں پی ٹی آئی نے میدان مارلیا


پشاور( 24نیوز ) خیبر پختونخوا میں سینیٹ کے خالی نشست پر ضمنی الیکشن میں پی ٹی آئی نے میدان مارلیا۔

تفصیلات کے مطابق خیبرپختونخوا اسمبلی سینیٹ کے خالی نشست پر پولنگ کا عمل صبح 9 سے شام 4 بجے تک جاری رہا،پہلا ووٹ پی پی پی کے احمد کنڈی نے پول کیا،اپوزیشن لیڈراکرم درانی، وزیر بلدیات شہرام ترکئی اور مشیر کامران بنگش،وزیر سیاحت عاطف خان، مشیر کریم خان، وزیر مواصلات اکبر ایوب، وزیر صحت ہشام انعام کا نے بھی ووٹ پول کیا۔

 سینیٹ کی خالی نشست پر 145میں سے 139ارکان اپنا ووٹ پول کیا جبکہ جماعت اسلامی نے ایک بار پھر سینیٹ انتخاب میں ووٹ ڈالنے سے انکار کردیا، جماعت اسلامی کے عنایت اللہ، سراج الدین اور حمیرا خاتون نے ووٹ پول  نہیں  کیا،تین ارکان اسمبلی بیرون ملک ہونے کے باعث ووٹ پول نہ کر سکے۔

پی ٹی آئی تاج محمود ترند، اے این پی کے فیصل زیب اور آزاد رکن فیصل زمان ملک سے باہر ہے،خیبرپختونخوا اسمبلی سینیٹ کے خالی نشست پر پی ٹی آئی کی جانب سے ذیشان خانزادہ جبکہ  پیپلزپارٹی کے فرزند علی وزیر مدمقابل تھے،اے این پی نے پیپلزپارٹی کے حق میں اپنے امیدوار حاجی ہدایت اللہ کو دستبردار کیا۔

خیبرپختونخوا اسمبلی میں تحریک انصاف کے 95 ارکان،ق لیگ کا ایک رکن بھی پی ٹی آئی کا اتحادی ہے، خیبرپختونخوا اسمبلی کے احاطے اور اطراف میں 400 پولیس اہلکاروں کو تعینات کیا گیا۔

تحریک انصاف کے ذیشان خانزادہ نے 145 کے ایوان سے104 ووٹ حاصل کیے،مدمقابل فرزند علی نے31ووٹ حاصل کیے جبکہ چارووٹ مسترد ہوئے۔