ڈار اثاثہ جات کیس:گواہ پر جرح مکمل نہ ہوسکی

ڈار اثاثہ جات کیس:گواہ پر جرح مکمل نہ ہوسکی


اسلام آباد( 24نیوز )سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار کے خلاف آمدن سے زائد اثاثہ جات ریفرنس کی سماعت ہوئی ، ملزم سعید احمد کے وکیل حشمت حبیب نے گواہ محسن امجد پر جرح کی،جرح مکمل نہ ہو سکی تو عدالت نے آئندہ سماعت پر بھی گواہ محسن امجد کو طلب کر لیا۔
احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے اسحاق ڈار کے خلاف اثاثہ جات ریفرنس کی سماعت کی، تینوں شریک ملزمان عدالت میں پیش ہوئے۔حشمت حبیب کی جرح کے دوران گواہ نے بتایا کہ پہلا  اکاﺅنٹ 28 دسمبر 1994 میں کھولا گیا، جبکہ 16 مارچ 2006 میں یہ فارن اکاﺅنٹ بند ہوا تھا، گواہ نے بتایا کہ بینک ریکارڈ کے مطابق ان اکاﺅنٹس سے متعلق بینک سٹاف کی کوئی نہیں تحقیقات ہوئیں تھیں، حشمت حبیب نے پوچھا کہ آپ نے گزشتہ سماعت میں بتایا کہ پاسپورٹ اور اکاﺅنٹ فارم پر دستخط مشترک نہیں یہ بات آپ کو کب پتہ چلی۔
وکیل، محسن امجد نے بتایا کہ جب آپ نے دکھایا اسی دن پتہ چلا، میں نے اس حوالے سے سینئرز کو آگاہ کیا لیکن کوئی ایکشن نہیں ہوا. عدالت نے سماعت 3 اکتوبر تک ملتوی کر دی، حشمت حبیب آئندہ سماعت پر بھی جرح جاری رکھیں گے۔