کراچی: بجلی کی عدم فراہمی پر جماعت اسلامی کی ہڑتال اور دھرنے

کراچی: بجلی کی عدم فراہمی پر جماعت اسلامی کی ہڑتال اور دھرنے


کراچی (24نیوز)  کے الیکٹرک کے خلاف جماعت اسلامی کی جانب سے آج ہڑتال کی کال دی گئی ہے جبکہ صبح سویرے سے ہی شہرکے مختلف علاقوں میں احتجاجی مظاہرے اورسڑکوں پرجلاوگھیراو شروع ہوگیا  ہے۔

کراچی میں جماعت اسلامی کی جانب سے کے الیکٹرک کی لوڈ شیڈنگ کے خلاف ہڑتال کی کال پر تاجر تنظیموں کی جانب سے حمایت کے بعد بڑے کاروباری مراکز بند ہیں جبکہ شارع فیصل، اورنگی ٹاؤن، لیاری، بنارس، بلدیہ ٹاؤن، دہلی کالونی، ناظم آباد، مومن آباد، شاہ فیصل، ملیر اور لانڈھی سمیت مختلف علاقوں میں عوام کی جانب سے احتجاج کا سلسلہ بھی جاری ہے۔

بنارس چوک پر احتجاج کے دوران مشتعل مظاہرین نے ٹائر نذر آتش کرکے سڑک بلاک کردی اور کے الیکٹرک کے خلاف نعرے بازی کی، صورتحال سے نمٹنے کے لئے پولیس کی نفری بھی موقع پر پہنچی لیکن مظاہرین کو منتشر نہ کرسکی، ‏دہلی کالونی مظاہرین نے رکاوٹیں کھڑی کرکےسڑک بلاک کردی اور اورنگی ٹاؤن میں بھی ٹائرجلاکرسڑک بندکردی گئی۔

یہ بھی پڑھیں: مشیر خزانہ نئے مالی سال کاوفاقی بجٹ آج پیش کریں گے

مختلف علاقوں میں جماعت اسلامی کے کارکنان اور عوام کے سڑکوں پر دھرنوں کے باعث ٹریفک کی روانی متاثر ہوئی ، ملیر، لیاری، بنارس اور شاہراہ فیصل مشتعل مظاہرین نے پتھراؤ بھی کیا جبکہ متعدد علاقوں سے پولیس نے مظاہرین کو منتشر کرکے ٹریفک کی روانی بحال کرادی۔

جماعت اسلامی کے امیر حافظ نعیم الرحمان نے کہا کہ وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے لوڈشیڈنگ کے خاتمے کی بات کی تھی لیکن 5 روز گزرنے کے باوجود بھی لوڈ شیڈنگ میں کمی نہ ہوسکی۔ کراچی کے سنگین مسائل میں گھرا ہوا ہے لیکن حکومت اور انتظامیہ خاموش تماشائی بنی ہوئی ہے۔