سی آئی اے کا سابق سربراہ امریکہ کا وزیر خارجہ بن گیا

سی آئی اے کا سابق سربراہ امریکہ کا وزیر خارجہ بن گیا


واشنگٹن( 24نیوز )امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اپنا نیا مہرہ میدان میں لے آئے،سی آئی اے کے سابق ڈائریکٹر مائیک پومپی نے بطور 70ویں وزیر خارجہ کی حیثیت سے حلف اٹھالیا۔

تفصیلات کے مطابق وزیرخارجہ ریکس ٹلرسن کی برطرفی کے بعد ڈونلڈ ٹرمپ انتظامیہ کو نئے وزیر خارجہ کے انتخاب کے لئے کافی مشکلات کا سامنا کرنا پڑا اور اپوزیشن جماعت ڈیموکریٹک پارٹی کی شدید تنقید کے باوجود مائیک پومپی امریکی وزیر خارجہ منتخب ہوگئے۔

سیینٹ میں حکمراں جماعت ریپبلکن پارٹی کی اکثریت کے باعث مائیک پومپی کو متفقہ طور پر منتخب کیا گیا اور اپوزیشن جماعت ڈیموکریٹک پارٹی کے 5 اراکین نے بھی پومپی کے حق میں ووٹ دیا۔

امریکی وزیر خارجہ کے انتخاب کے لئے مائیک پومپی کو سینیٹ میں 57 میں سے 42 ووٹ ملے جس کے بعد وہ نئے وزیر خارجہ منتخب ہوئے،مائیک مومپی نے سینیٹ سے منتخب ہونے کے بعد اپنے عہدے کا بھی حلف اٹھالیا، جس کے بعد انہیں مبارکباد دیے جانے کا سلسلہ شروع ہوگیا۔

ڈیموکریٹک پارٹی کی جانب سے مائیک پومپی پر الزام عائد کیا جاتا رہا ہے کہ وہ مسلمانوں کے خلاف اور جنگ کے حامی ہے۔

یاد رہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے گزشتہ ماہ ذاتی تنازع پر وزیر خارجہ ریکس ٹلرسن کو ایک ٹوئٹ کر کے برطرف کرنے کے احکامات جاری کیے تھے،چون سالہ مائیک پومپیو سی آئی اے کے بہت سارے خفیہ آپریشنز میں حصہ لے چکے ہیں۔