مقبوضہ کشمیرکی 8 سالہ بچی سے زیادتی و قتل پر بالی وڈ اداکارہ ملیکہ شراوت بھی بول پڑیں

مقبوضہ کشمیرکی 8 سالہ بچی سے زیادتی و قتل پر بالی وڈ اداکارہ ملیکہ شراوت بھی بول پڑیں


ویب ڈیسک: بالی ووڈ کی نامور اداکارہ ملیکہ شراوت بھارت میں بڑھتی ہوئے جرائم خصوصاً بچیوں،بچوں کے زیادتی کے واقعات پر بول پڑیں،انہوں نے کہہ دیا ہے کہ بہت ہوگیا ،اب ایسا نہیں ہونا چاہیے۔

ان کا کہنا ہے کہ گاندھی کے ملک کو ہم نے عزت کے لٹیروں کی سرزمین بنادیا ہے،خود کو سیکولر ملک کہنے والا بھارت ہمیشہ ہی اپنی عوام کو بنیادی حقوق اور انصاف دینے میں ناکام رہا ہے یہی وجہ ہے کہ بھارتی معاشرے میں بڑھتی ہوئی عریانیت کی وجہ سے خواتین کے ساتھ جنسی ہراسانی کے واقعات میں دن بدن اضافہ دیکھنے میں آرہا ہے جب کہ مقبوضہ کشمیرکی 8 سالہ آصفہ بانو کا اجتمائی زیادتی کے بعد قتل اور بی جے پی رہنما کی جانب سے ہندو لڑکی سے اجتماعی زیادتی جیسے واقعات نے پوری انسانیت کا سرشرم سے جھکا دیا۔

بھارتی میڈیا رپورٹس کے مطابق بالی ووڈ اداکارہ ملیکہ شراوت نے بھارت میں پیش آنے والے انسانیت سوز واقعات پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ بھارت میں بچوں اور عورتوں کے ساتھ جو کچھ بھی ہورہا ہے وہ ایک شرم ناک عمل ہے اور اس درندگی کی وجہ سے گاندھی کی سرزمین عزت کے لٹیروں کی سرزمین بن چکی ہے۔

ضرور پڑھیں:انکشاف 16 جون 2019

ملیکہ شراوت کا کہنا تھا کہ میرے خیال میں اس وقت ملک میں میڈیا بہت طاقتور ہے اور جنسی حراسانی کے بڑھتے واقعات کو روکنے میں میڈیا ہی اہم کردار ادا کر سکتا ہے اور ہماری تمام توقعات بھی میڈیا سے ہی وابستہ ہیں۔

یاد رہے مقبوضہ کشمیر زیادتی کے قتل کے اس واقعہ کی سابق پاکستانی کرکٹ کپتان شاہد آفریدی،بھارتی اداکار فرحان اختر،کرینہ کپور،ہیما مالنی ،پرنیتی چوپڑا،انوشکا شرما،سونم کپور،سنجے دت اکشے کمار،پریانکا چوپڑا نے بھی مذمت کی تھی ۔