خواجہ سرا عام نوجوانوں کی نسبت زیادہ بیماریوں کا شکار

خواجہ سرا عام نوجوانوں کی نسبت زیادہ بیماریوں کا شکار


واشنگٹن (24نیوز)نوجوان خواجہ سرا زیاد ہ خراب صحت کی پیچید گیوں کا شکار ہوتے ہیں، رپورٹ کے مطابق30 فیصد خواجہ سرا اپنے ساتھیوں کے مقابلے میں زیادہ بیماریوں میں مبتلا ہیں۔

ڈیلی میل کی رپورٹ کے مطابق بالٹیمور میں جان ہاپکنز بلومبرگ سکول آف پبلک ہیلتھ میری لینڈ کی ٹیم نے ان کی زیادہ قریب سے جسمانی اور ذہنی نگرانی کرنے کیلئے ڈاکٹرز کو مدعو کیا  اس ٹیم نے 3 ہزار سے زائد نوجوان خواجہ سرائوں  اور 7 لاکھ انیس ہزار دیگر نوجوانوں سے ملاقات کی اور ایک اندازے کے مطابق 0.55 فیصد لوگ اس سروے میں  خواجہ سرا ثابت ہوئے جس سے اندازہ لگایا جا سکتا ہے کہ امریکا میں نوجوان خواجہ سرائوں کی تعداد 1.27 ملین کے لگ بھگ ہے۔

دیگر  نوجوانوں کے مقابلے میں 30 فیصد خواجہ سرا خراب صحت کا شکار نظر آئے اور وہ تقریبا66 فیصد دماغی پریشانی میں مبتلا ہیں مجموعی طور پر 19 فیصدخواجہ سرا دیگر 16 فیصد لوگوں کے مقابلے میں زیادہ سگریٹ نوشی کرتے نظر آتے ہیں۔

ایک ریسرچر کیلن بارکر کے مطابق امریکا نے پچھلے چند سالوں کے دوران قدرتی انسانی تنوع اور جنسی شناخت کو خوشی قبول کیا ہے لیکن 2014 سے 2017 کے درمیان ٹرانس جینڈر  علاج اور رویے پر کوئی تقریب منعقد نہیں کی گئی بیکر کا کہنا ہے کہ امریکا میں معاشرہ ایک ٹرانسجینڈر کو قبول نہیں کر سکتا یہ مشکل ہے ۔

اظہر تھراج

Senior Content Writer