ن لیگ میں رہنماؤں کی تلخیاں برقرار،چوہدری نثار سے نواز شریف روٹھ گئے

ن لیگ میں رہنماؤں کی تلخیاں برقرار،چوہدری نثار سے نواز شریف روٹھ گئے


اسلام آباد (24نیوز) پاکستان مسلم لیگ ن میں ایک بار پھر ناراضگیوں کا موسم آن پہنچا، اب کی بار نثار نہیں بلکہ ہمیشہ روٹھنے والے چوہدری نثار سے نواز شریف روٹھ گئے ہیں، ساتھیوں کا تادیبی کاروائی کا مشورہ لیکن نواز شریف چاہتے ہیں کہ نثار اپنے مستقبل کا فیصلہ خود کریں۔

تفصیلات کے مطابق نواز شریف اور چوہدری نثار کے درمیان تحریک عدل پر اختلافات ہیں اور چوہدری نثار نے اس تحریک کی مخالفت کرتے ہوئے کارکنان کو اس میں شامل ہونے سے روکنے کا بیان دیا ہے جبکہ نواز شریف نے چوہدری نثار کی تحریک عدل کی مخالفت کو مسترد کر دیا ہے, جس کے بعد نواز شریف اور چوہدری نثار کے درمیان لفظوں کی سرد جنگ بھی جاری ہے۔

نواز شریف نے مشکل وقت میں بے وفائی کا طعنہ دیا تو چوہدری نثار نے کہہ دیا کہ جو کونسلر کا الیکشن نہیں لڑا وہ ن لیگ کی پالیسیاں بنا رہا ہے۔۔ نواز شریف نے پہلی بار چوہدری نثار سے ناراضگی کا معاملہ قریبی راہنماؤں کے سامنے بھی رکھا اور افسوس کا اظہار کیا۔ اس موقع پر دو وفاقی وزراء نے بھی حکومت کیخلاف بیان بازی پر شکایت کی۔

ذرائع کے مطابق وزیر خارجہ اور وزیر داخلہ دونوں ہی چوہدری نثار کے بیانات سے تنگ نکلے اور کہا کہ حکومتی جماعت کا حصہ ہوتے ہوئے بھی چوہدری نثار حکومتی پالیسیوں پر میڈیا میں بیان جاری کرتے ہیں, وزراء نے پارٹی ڈسپلن کی خلاف ورزی کا مطالبہ بھی کیا۔ نواز شریف تادیبی کارروائی کے حق میں نہیں۔

 ذرائع کا کہنا ہے کہ نواز شریف چاہتے ہیں چوہدری نثار اپنے مستقبل کا فیصلہ خود کریں۔

مزید جاننے کیلئے ویڈیو دیکھیں: