ریلوے اراضی پر ہاؤسنگ سوسائٹیز بنانے پر پابندی عائد

ریلوے اراضی پر ہاؤسنگ سوسائٹیز بنانے پر پابندی عائد


لاہور(24نیوز) سپریم کورٹ نے ریلوے اراضی پر ہاؤسنگ سوسائٹیز بنانے پر پابندی لگادی، زرعی اراضی 3 سال سے زائد لیز پر نہ دینے کا حکم دیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں چیف جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے   ریلوے کی اراضی لیزپردینےکےحوالے سےکیس کی سماعت کی، وفاقی وزیر رریلوے شیخ رشید  اوررائل پام کلب انتظامیہ عدالت میں پیش ہوئی، عدالت پیش ہوئے، سپریم کورٹ نے رائل پام کلب انتظامیہ تحلیل کر دی،میسرز فرگوسن کو رائل پام کلب کی نئی انتظامیہ مقرر کر دیا۔

میسرز فرگوسن کو رائل پام کلب کا تمام ریکارڈ فوری قبضے میں لینے کا حکم  دیتے ہو ئے عدالت کا کہنا تھا کہ پرانی انتظامیہ کلب کی حدود میں داخل نہیں ہو سکے گی، کلب میں تمام پروگرام،سرگرمیاں معمول کے مطابق چلیں گی، ریلوے سےمتعلق ریکارڈ رائل پام کلب سےباہر نہیں جائےگا۔

رائل پام سےمتعلق لاہور ہائیکورٹ کےتمام احکامات بھی غیر موثر قرار  دے دیئے، سپریم کورٹ نےہائیکورٹ میں زیر التواء کلب کےمقدمات بھی منگوا ئے، چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار کا کہنا تھا کہ ریلوے اراضی پر ہاؤسنگ سوسائٹیاں بنانے پر پابندی لگا رہے ہیں، ریلوے کی زرعی اراضی3سالہ مدت سے زائد لیز پرنہیں دی جا سکتی ۔