لڑائی نہیں مذاکرات،افغان طالبان کی امریکہ کو ایک بار پھر مذاکرات کی پیشکش

لڑائی نہیں مذاکرات،افغان طالبان کی امریکہ کو ایک بار پھر مذاکرات کی پیشکش


کابل(24نیوز) لڑائی کے خاتمے کے لیے افغان طالبان نے امریکا سے بات چیت کی پھر سے پیشکش کے ہے،، طالبان نے امریکہ پر زور دیا ہے کہ افغانستان کی تقریباً 17 برس پرانی لڑائی ختم کرنے کے لیے مذاکرات کا آغاز کیا جائے۔
تفصیلات کے مطابق طالبان ایک بار پھر عندیہ دیا ہے کہ وہ مکالمے کی راہ تلاش کرنے کی خواہش رکھتے ہیں، لڑائی ختم کرنے کے طریقہ کار پر بات چیت کے لیے کابل میں بلائے گئے علاقائی راہنماؤں کے اجلاس کے آغاز سے دو روز قبل، اپنے بیان میں تحریک طالبان نے کہا ہے کہ وہ معاملے کا پُرامن تصفیہ چاہتے ہیں۔
خبر ایجنسی کے مطابق،،،افغانستان کی اسلامی امارات کا سیاسی دفتر امریکی اہل کاروں سے مطالبہ کرتا ہے کہ وہ افغان معمے کے پُرامن حل کے لیے اسلامی امارات کے سیاسی دفتر سے براہِ راست مذاکرات کریں۔
یا د رہے پاکستان،افغانستان ،چین اور روس پہلے ہی امن کیلئے کام کررہے ہیں اس میں ترکی اور ایران بھی کردار ادا کررہے ہیں،امن عمل کیلئے مڈاکرات کے کئی دور بھی ہوچکے ہیں۔
واضح رہے چند روز قبل افغان طالبان کی طرف سے امریکی عوام اور کانگریس ارکان کو مخاطب کرکے امن مذاکرات کی پیشکش کی گئی تھی جس کا امریکہ کی طرف سے کوئی خاطر خواہ جواب نہیں ملا ہے۔