اسحاق ڈار کی گرفتاری کیلئے نیب سرگرم


 لاہور(24نیوز)اسحاق ڈار کی گرفتاری کیلئے نیب سرگرم ہوگئی لندن سے انٹرپول کے ذریعے گرفتاری کیلئے نیب ریڈوارنٹ کے اجرا کیلئے کوششیں شروع کر دیں۔ نیب حکام کا کہنا ہے کہ اگر وزارت داخلہ نے تعاون نہ کیا تو عدالتوں سے رجوع کیا جائے گا۔ اسحاق ڈار اکتوبر 2017 کو علاج کیلئے لندن گئے پھر واپس نہیں آئے۔

تفصیلات کے مطابق آمدن سے زائد اثاثوں کے ریفرنس میں اشتہار ملزم اسحاق ڈار کو وطن واپس لانے کے لئے لیے نیب کا آخری حد تک جانے کا فیصلہ کرلیا ہے۔

نیب ذرائع کےمطابق اسحاق ڈار کو واپس لانے کے لئے نیب نے ریڈ وارنٹ جاری کروانے کی کاروائی شروع شروع کردی ہے۔

نیب حکام کا کہناہےکہ وزیر خزانہ کی انٹر پول سے واپسی کے لئے وزارت داخلہ سے ریڈ وارنٹ کی استدعا کی جائے گی۔ اسحاق ڈار کے خلاف عدالتی ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری اور اشتہاری ملزم قرار دینے کے احکامات سے انٹر پول کو آگاہ کیا جائے گا۔

نیب حکام کا دعوی ہےکہ وزارت داخلہ نے اگر تعاون نا کیا تو پھر اعلی عدالتوں سے رجوع کیا جائے گا۔ وزارت داخلہ نے اسحاق ڈار کا نام ای سی ایل میں شامل کرنے سے متعلق نیب کی استدعا کو پہلے ہی مسترد کردیا ہے۔

وزیر خزانہ اسحاق ڈارکی چھٹی 22 فروری کو ختم ہوچکی ہے۔ انہوں نے مزید 45 روز مزید چھٹی کی درخواست بھی دے رکھی ہے۔ اسحاق ڈار اکتوبر 2017 میں علاج کےلیے لندن گئے اس کے بعد واپس نہیں آئے ہیں۔