نقیب اللہ کیس: 6 پولیس اہلکاروں کا 7 روزہ جسمانی ریمانڈ منظور

نقیب اللہ کیس: 6 پولیس اہلکاروں کا 7 روزہ جسمانی ریمانڈ منظور


کراچی(24نیوز)سندھ ہائیکورٹ نے نقیب اللہ کیس میں ملوث 6 پولیس اہلکاروں کا 7 روزہ جسمانی ریمانڈ منظور کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق نقیب اللہ کے ماورائے عدالت قتل کیس ملوث 6 پولیس اہلکار سب انسپکٹر محمد یاسین، اسسٹنٹ سب انسپکٹر (اے ایس آئی) فرحت حسین، اے ایس آئی اللہ یار، ہیڈ کانسٹیبل خضرت حیات، ہیڈ کانسٹیبل محمد اقبال اور کانسٹیبل ارشد علی کو حراست میں لیا گیا تھا۔

ذرائع کے مطابق تمام اہلکار ملیر کے سچل تھانے کی چوکی عباس ٹاؤن اور ہائی وے کے قریب چوکی پر تعینات تھے، یہ تمام اہلکار اس پولیس پارٹی میں شامل تھے جس نے نقیب اور اس کے دوستوں کو اٹھایا اور تشدد کا نشانہ بنایا۔

ضرور پڑھیں:کھراسچ، 18 جون 2019

پولیس نے تمام گرفتار اہلکاروں کو سندھ ہائیکورٹ کے انتظامی جج کی عدالت میں پیش کیا جہاں ان کے 14 روزہ جسمانی ریمانڈ کی استدعا کی گئی تاہم عدالت نے ملزمان کے 7 روزہ جسمانی ریمانڈ کی استدعا منظور کرتے ہوئے انہیں پولیس کے حوالے کردیا۔

واضح رہے اس سے قبل چیف جسٹس نے نقیب اللہ کے ماورائے عدالت قتل کیس کے مرکزی ملزم راؤ انوار کی فوری گرفتار ی کا حکم دیا تھا،عدالت نے پولیس کو تین دن کی ڈیڈ لائن دی ہے۔