نسل پرستانہ جملے کسنے والےسزا یافتہ کھلاڑی

نسل پرستانہ جملے کسنے والےسزا یافتہ کھلاڑی


لاہور ( 24 نیوز ) سرفراز احمد سے قبل بھی کئی کھلاڑی نسل پرستانہ جملوں پر سزا بھگت چکے ہیں.

جنوبی افریقی کھلاڑی اینڈیل فہلوک وایو کے خلاف نسل پرستانہ جملہ کسنے پر پاکستان کرکٹ ٹیم کے کپتان سرفراز احمد کو آئی سی سی کی جانب سے 4 میچز کی پابندی کا سامنا کرنا پڑے گا۔ سرفراز احمد سے قبل بھی کئی کھلاڑی نسل پرستانہ جملوں پر سزا بھگت چکے ہیں۔ سال 2003 میں آسٹریلیا کے ڈیرن لیمن نے سری لنکن کھلاڑیوں کو نسل پرستی کا نشانہ بنایا تھا، جس پرانہیں 5 میچز کی پابندی کا سامنا کرناپڑاتھا۔ سال 2007 میں ہرشل گبز نے جنوبی افریقہ میں مقیم پاکستانی شائقین پر جملے کسے تھے،  گبزکو دو ٹیسٹ میچز کے لیے معطل کیا گیا۔

بھارتی اسپنر ہربھجن سنگھ نے سال 2008 میں آسٹریلیا کے اینڈریو سائمنڈ کو بندر کہا تھا، جس پر انہیں معطلی کا سامنا کرنا پڑا تاہم بعد میں سزا جرمانے میں تبدیل ہوگئی۔ بھارتی تماشائیوں کی جانب سے 2018 عمران طاہر پر نسلی جملے کسے گئے جس پر سیکورٹی حکام نے ایکشن لیا۔اس کے علاوہ 80 اور 90 کی دہائی میں ایسے کئی واقعات رونما ہوچکے ہیں۔