دھاندلی کے شور میں فافن کا الیکشن کمیشن کو اہم مشورہ


اسلام آباد( 24نیوز )فری اینڈ فیئر الیکشن نیٹورک نے الیکشن کمیشن کو مسترد ووٹوں کا دوبارہ جائزہ لینے کی تجویز دے دی ہے، فافین کا کہنا ہے کہ قومی اسمبلی کے مسترد ووٹوں کی تعداد جیتنے والے ووٹوں کی تعداد سے زیادہ ہے۔
فافین نے الیکشن 2018 سے متعلق ابتدائی رپورٹ میں کہا ہے کہ قومی اسمبلی کی 35 نشستوں کے مسترد ووٹ جیتنے والے ووٹوں سے کہیں زیادہ ہے، اس لئے الیکشن کمیشن کو مسترد ووٹوں کا دوبارہ جائزہ لینا چاہئے۔

یہ بھی پڑھیں۔۔  الیکشن کمیشن نے نتائج کا اعلان کردیا
فافین کی رپورٹ کے مطابق پنجاب سے 24، خیبر پختونخوا 6، سندھ 4 اور بلوچستان کی 1 قومی اسمبلی کی نشست میں مسترد ووٹ جیتنے والے ووٹ سے زیادہ ہیں۔
فافین کے سربراہ سرور باری نے رپورٹ پیش کرتے ہوئے کہا کہ ووٹر ٹرن آو¿ٹ 53.3 فیصد رہا، دہشت گردی کے واقعات میں 150 سے زائد افراد جاں بحق ہوئے، الیکشن کمیشن سیاسی جماعتوں کے انتخابات سے متعلق تحفظات دورکرے، شانگلہ اورشمالی وزیرستان میں خواتین ووٹرکا تناسب 10 فیصد سے کم رہا، تناسب کم ہونے پر ان نشستوں کے انتخاب کالعدم قرار دئیے جاسکتے ہیں۔

 یہ بھی پڑھیں۔۔۔ پنجاب میں ہم حکومت بنائینگے،روکا گیا تو مزاحمت کرینگے:حمزہ شہباز
فافین کے مطابق این اے 131 لاہور میں مسترد ووٹ 2835 جبکہ 680 ووٹ سے جیت ہوئی، اسی طرح این اے 10 شانگلہ میں مسترد ووٹ 4632 اور جیت 1405 ووٹ سے ہوئی۔