7اسلامی ملکوں کے شہریوں کی امریکہ داخلہ پر پابندی

7اسلامی ملکوں کے شہریوں کی امریکہ داخلہ پر پابندی


24نیوز : امریکی عدالت نے 7 اسلامی ممالک کے شہریوں کے امریکا داخلے پر پابندی بحال کردی۔ امریکی سپریم کورٹ نے 7 اسلامی ملکوں کے شہریوں کے امریکا میں داخلے پر پابندی کو جائز قرار دے دیا۔

امریکی سپریم کورٹ نے 7 اسلامی ملکوں کے شہریوں کے امریکا میں داخلے پر پابندی کو جائز قرار دے دیا، صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی طرف سے لگائی گئی پابندی کو لوئر کورٹس نے غیرآئینی قرار دیا تھا، ٹرمپ نے اس فیصلہ کو زبردست کامیابی قرار دیا جبکہ مسلمانوں نے اس مذہبی تعصب قرار دیا ہے۔ فیصلہ کے خلاف مظاہرہ بھی کیا گیا۔

 یہ بھی پڑھیں:چین اور یورپی یونین کا امریکہ ا کیخلاف تجارتی جنگ کا اعلان 

ہالینڈ کے پبلک مقامات پر نقاب لینے پر پابندی عائد کردی گئی،  ایوان بالا نے پابندی کا بل منظور کرلیا، بل کی منظوری پر دائیں بائیں کے انتہا پسند رہنما گیرٹ ولڈرز نے کہا ہے کہ یہ ہالینڈ میں ڈی اسلامائزیشن کی جانب پہلا قدم ہے، اب ان کا اگلا ہدف نیدرلینڈز کی تمام مساجد کو بند کرنا ہوگا۔امریکی ریاست ٹیکساس میں زیرتعمیر ہسپتال میں دھماکے سے ایک شخص ہلاک اور 12 زخمی ہوگئے۔ دھماکے سے کوریل میموریل ہیلتھ کیئر سسٹم کا ایک حصہ گر گیا۔ زخمیوں میں بیشتر مزدور ہیں جن میں سے چار کی حالت تشویشناک ہے۔

پڑھنا نہ بھولیں:طیب اردگان ایک بار پھر ترک صدر منتخب،حامیوں کا جشن 

ایرانی صدر حسن روحانی کا کہنا ہے کہ امریکی پابندیاں نفسیاتی معاشی اور سیاسی جنگ ہے جس کا واشنگٹن کو بھرپور جواب دیں گے۔ سرکاری ٹی وی پر خطاب میں انہوں نے کہا کہ حکومت امریکا کی نئی پابندیوں کے باوجود معیشت پر قابو پانے کی کوشش کرے گی۔جاپانی شہزادی آیاکو نے شاہی خاندان سے باہر شادی کا اعلان کیا ہے۔ آیاکو کے 32 سالہ دوست موریو ایک شپنگ کمپنی میں ملازم ہیں۔ اس شادی کے بعد آیاکو کو شاہی رتبہ چھوڑنا پڑے گا۔ اس سے قبل بھی دو شہزادیاں دل کے ہاتھوں مجبور ہو کر شاہی رتبہ چھوڑ چکی ہیں۔

یہ خبر ضرور پڑھیں:سعودی عرب میں خواتین کیلئے بڑی خوشخبری 

ترکی میں عام انتخابات کے بعد ایک بار پھر کریک ڈاؤن شروع کردیا گیا ہے۔ مختلف علاقوں سے 86 افراد گرفتار کر لئے گئے جن میں 30 حاضر سروس۔ سابق فوجی افسران اور 13 امام شامل ہیں۔ ان افراد پر الزام ہے کہ انہوں نے 2016 میں ناکام فوجی بغاوت میں حصہ لیا تھا۔

شازیہ بشیر

   Shazia Bashir   Edito