ایڈز کے متاثرہ مریضوں میں اضافہ

ایڈز کے متاثرہ مریضوں میں اضافہ


لاہور(24 نیوز) ایچ آئی وی جیسے مہلک مرض نے سندھ کے بعد پنجاب میں بھی اپنے پنجے گاڑلیے ہیں مگراس طرف حکام کی توجہ نہ ہونے کے برابر ہے، ایڈزکےکیسزمیں اضافےسےعوامی وسماجی حلقوں میں تشویش بڑھنےلگی ہے۔

سندھ کےبعدپنجاب میں بھی ایڈزکےمریضوں کی تعداد بڑھنے لگی،لاڑکانہ کی تحصیل رتوڈیرومیں 2 ماہ قبل 13بچوں میں ایچ آئی وی ایڈز وائرس کی تشخیص ہوئی، سندھ حکومت نےاسکریننگ کاعمل شروع کیا دیکھتے ہی دیکھتےمتاثرہ افرادکی تعداد856 سےزائدہوگئی۔

سندھ کے نواحی گاؤں غوث بخش عمرانی میں ایک خاندان ایسابھی ہےجس کے5 افراد ایچ آئی وی ایڈز میں مبتلاہیں، رحیم بخش عمرانی نامی شخص کی بیوی،3معصوم بچےاوربھابھی وائرس سےمتاثرہ ہیں۔

دوسری جانب24 نیوزنےمحکمہ صحت پنجاب کی کارکردگی سےبھی پردہ اٹھادیا،اسپتال انفارمیشن مینجمنٹ سسٹم کی تین ماہ کی رپورٹ کےمطابق چنیوٹ میں مزید19افرادمیں ایڈزکی تصدیق ہوگئی،گزشتہ3برسوں میں 55افرادایڈزکاشکارہوچکےہیں،شہریوں نےحکومت سےایڈزکےخاتمےکیلئےاقدامات کامطالبہ کردیا۔

چنیوٹ میں ایڈزکےبڑھتےکیسزکےبعد ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسرڈاکٹرمہاراخترنےرپورٹ کوہی غلط قراردیدیا۔ ملتان میں بھی خطرناک مرض ایچ آئی وی بےقابوہوگیا، گزشتہ2ماہ میں150سےزائدافراد میں ایڈزکی تصدیق ہوئی جس کےبعدمتاثرہ مریضوں کی1341ہوگی مگرمحکمہ صحت اورایڈز کنٹرول پروگرام مرض پرقابو پانے میں ناکام ہیں۔