انسانی سمگلنگ کیس کی سماعت،وفاقی حکومت سے جواب طلب کر لیا گیا


اسلام آباد(24نیوز) سپریم کورٹ میں انسانی سمگلنگ کیس کی سماعت، عدالت نےانسدا د انسانی سمگلنگ کمیٹی کی سفارشات پر عمل درامد کے لئے وفاقی حکومت سے جواب طلب کر لیا۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں ا نسانی سمگلنگ کیس کی سماعت کے دوران سرکاری وکیل نے عدالت کو بتایا کہ انسانی سمگلنگ کو روکنے کے لئے سمری وزیراعظم کو بھجوا دی گئی ہے۔

یہ بھی ضرور پڑھیں:نواز شریف اپنے کیے پر پچھتانے لگے 

 چیف جسٹس کا کہنا تھا کہ سمریاں بھجوائی جا رہی ہیں۔جب تک سمری منظور ہوتی ہے تب تک حکومت ختم ہو جاتی ہے۔لوگ مر رہے ہیں۔ تربت میں 20 لوگ مر گئے۔چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ کمیٹی میں کون کون شامل ہے۔سرکاری وکیل نے عدالت کو بتایا کہ کمیٹی میں سیکرٹری داخلہ اور ڈی جی ایف آئی اے شامل ہے۔

ڈی جی ایف آئی اے نے کہا کہ منڈی بہاولدین اور حافظ آباد میں سب سے زیادہ لوگ غیر قانونی طریقہ سے سفر کرتے ہیں۔  چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ کیا وفاقی حکومت فنڈ دیتی ہے۔3 ممبران پر مشتمل کمیٹی مسائل کے حل کے لئے بنائی گئی ہے۔کیا کمیٹی کی طرف سے اٹھائے گئے اقدامات کی رپورٹ پیش کی گئی۔

یہ بھی ضرور پڑھیں:روح لرزانے والی ویڈیو ز ٹوینٹی فورنیوز کو موصول ہوگئیں 

 عدالت نے حکم دیا کہ سیکرٹری داخلہ، سیکرٹری خارجہ اور ڈی جی ایف آئی اے پر مشتمل کمیٹی نے تجاویر دیں۔عدالت نے کمیٹی سفارشات پر عمل درامد کے لئے وفاقی حکومت سے جواب طلب کر لیا۔ کیس کی سماعت غیر معینہ مدت تک ملتوی کر دی گئی۔