موجودہ حکومت نے پاکستان کے ہر شہری کو کتنا مقروض کر دیا؟ جاننے کیلئے خبر پڑھیں


اسلام آباد(24نیوز) ن لیگ حکومت نے آنے والی نسلوں کو بھی مقروض بنا دیا، 5 سال میں ملک میں ترقی کے نام پر لیے جانے والے قرضوں کا حجم 60 ارب سے 91 ارب ڈالر تک پہنچ گیا، پاکستان کا ہر شہری آج 1 لاکھ 37 ہزار روپے کا مقروض ہے۔

تفصیلات کے مطابق ن لیگ کے قائدین نے 2013 میں ملک کو قرضوں کی دلدل سے نکالنے اور ملکی معیشت کو اپنے پاؤں پر کھڑے کرنے کے دعوے تو بہت کئے۔ لیکن پانچ سال کے دور اقتدار میں پاکستان پر قرضوں کا بوجھ کم ہونے کے بجائے اور بڑھ گیا۔ لیگی حکومت نے اپنے دور میں 30 ارب ڈالر سے زائد کا قرض لیا۔ جس کے بعد ملک پر قرضوں کا بوجھ 60 ارب سے بڑھ کر 1 ارب ڈالر تک پہنچ گیا۔

یہ بھی لازمی پڑھیں:پاکستان کا بھارت کے منہ پر ایسا طمانچہ جس کی گونج صدیوں تک یاد رکھی جائے گی 

 واضح رہے کہ ہر پاکستانی آج 1 لاکھ 37 ہزار روپے کا مقروض ہے لیکن حکومتی وزرا کی پر دی جانے والی منطق عجیب ہے۔ وزرا کا کہنا ہے کہ قرض لینا بری بات نہیں یہ قرضہ اہم منصوبوں پر لگائے گئے۔ حکومتی وزرا کے موقف کے برعکس اقتصادی ماہرین کا کہنا ہے کہ جون 2018 تک پاکستان پر قرضوں کا بوجھ 95 ارب ڈالرز تک پہنچنے کا امکان ہے۔ جو انتہائی خطرناک ثابت ہوسکتا ہے۔