مرغی کھانیوالے ہوشیار ہو جائیں

مرغی کھانیوالے ہوشیار ہو جائیں


ٹھٹھہ(24 نیوز) مرغی میں  رانی کھیت سمیت دیگر بیماریاں بڑے پیمانے پر پھیل رہی ہیں جن کی وجہ سے ہزاروں کی تعداد میں مرغیاں مرنا شروع ہوگئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق ٹھٹھہ میں بیماری سے ہزاروں مرغیاں مرنے لگیں۔ڈاکٹر امین سومرو ریسرچ آفیسر سندھ ویکیسن سنٹرکراچی کا کہنا ہے کہ رانی کھیت سمیت دیگر بیماریاں کی وجہ سے مرغی سست ہوجاتی ہے اور کھانا پینا چھوڑدیتی ہے ، جس کے بعد اس کے عمل تنفس پر حملہ ہوتاہے اور پھیٹھروں میں پانی بھر جاتاہے۔ مختلف علاقوں میں یہ بیماری پھیل رہی ہے موسم کی تبدیلی کے ساتھ ہی یہ بیماری حملہ آور ہوتی ہے۔ مردہ مرغیاں کو پولٹری فارم مالکان نے مختلف رستوں پر پھینک دی ہے جس کے باعث تعفن پھیل رہا ہے۔

ڈاکٹر امین سومرو  نے خبردار کیا کہ مردہ مرغی دفن نہ ہونے کی وجہ سے 6 کلو میٹر کے علاقے میں رہنے والے لوگوں کو بیماری متاثر کر سکتی ہے،

ضرور پڑھیں:انکشاف15 جون 2016

پولٹری فارمز میں جو بیماری پھیل رہی ہے وہ چوزا اور فیڈ سے آرہی ہےکیونکہ جو ادویات بنائی جارہی ہے وہ ناقص ہے۔