اسامہ بن لادن کی تلاش میں امریکیوں کی مدد کرنیوالا شکیل آفریدی غائب

اسامہ بن لادن کی تلاش میں امریکیوں کی مدد کرنیوالا شکیل آفریدی غائب


راولپنڈی( 24نیوز )امریکیوں کا چہیتا اور اسامہ بن لادن کی تلاش میں مدد کرنیوالا ڈاکٹر شکیل آفریدی پشاور جیل سے غائب ہوگیا ہے،ڈاکٹر شکیل آفریدی کو مئی 2011 میں ایبٹ آباد میں دہشت گرد تنظیم القاعدہ کے سربراہ اسامہ بن لادن کی امریکا کے ہاتھوں ہلاکت کے بعد گرفتار کیا گیا تھا۔
ان پر مبینہ طور پر اسامہ بن لادن کا سراغ لگانے میں امریکا کی مدد کرنے کا الزام عائد کیا گیا،بعدازاں 2012 میں ڈاکٹر شکیل آفریدی کو خیبر ایجنسی کے اسسٹنٹ پولیکل ایجنٹ کی جانب سے کالعدم تنظمیوں سے رابطوں اور ریاست مخالف سرگرمیوں میں ملوث ہونے کے الزام میں 33 سال قید کی سزا سنائی گئی تھی۔

یہ بھی پڑھیں: سی آئی اے کا سابق سربراہ امریکہ کا وزیر خارجہ بن گیا
شکیل آفریدی کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ انہوں نے ایبٹ میں جعلی انسداد پولیو مہم چلا کرایبٹ میں اسامہ بن لادن کی مبینہ موجودگی کی خبر سی آئی اے کو دی تھی اور مکمل اس کی مانیٹرنگ بھی کرتا رہا۔

یہ بھی پڑھیں: امن کی طرف اہم قدم،شمالی کورین صدر جنوبی کورین ہم منصب سے بغل گیر
ذرائع کے مطابق سینٹرل جیل پشاور میں ڈاکٹر شکیل آفریدی کی موجودگی سے سیکیورٹی خدشات تھے، یہی وجہ ہے کہ انہیں نامعلوم مقام پر منتقل کردیا گیا۔