لاہور سمیت پنجاب اور سندھ دھند کی لپیٹ میں حد نگاہ انتہائی کم


لاہور (24نیوز) لاہور سمیت پنجاب اور سندھ شدید دھند کی لپیٹ میں سردی کی شدت برقرار،شہر کا درجہ حرارت زیادہ سے زیادہ22سینٹی گریڈ رہنے کا امکان ہے۔

تفصیلات کے مطابق پنجاب کے ساتھ سندھ بیشتر علاقوں کو دھند نے اپنی لپیٹ میں لے لیا ہے، بعض جگہوں پر حد نگاہ صفر رہی۔ لاہور اورفیصل آباد موٹروے کو بند رکھا گیا،گاڑیاں ٹکرانے سے 8افراد جاں بحق ،50 زخمی ہوگئے۔

پنجاب کے مختلف شہروں بہاولنگر،لاہور،نارووال،پنڈی بھٹیاں،فیصل آباد،اوکاڑہ، گوجرانوالہ سمیت دیگرشہروں میں دھند چھائی رہی ٹریفک کی روانی متاثراور مسافروں کو شدید مشکلات کا سامنا رہا۔

نارووال اور گوجرانوالہ میں شدید دھند کے باعث حد نگاہ صفر رہی،دن میں شہری گاڑیوں کی لائٹیں آن کرکے سفرکرتے رہے۔ نیشنل ہائی وے اور موٹر وے پولیس نے شہریوں کولائیٹیں آن کرنے اور محتاط ڈرائیونگ کی ہدایت کی۔

بہاولنگر،سیالکوٹ،دینہ،رینالہ خورد،بہاولنگر،ٹھٹھہ،بوریوالہ ،صادق آباد،گوادر اوربہاولپورمیں دھند کے باعث گاڑیاں ٹکرا گئیں،جس کی وجہ سے 8افراد زندگی کی بازی ہارگئے،شاہراہوں پر حدنگاہ بہت زیادہ کم ہونے کے باعث حادثات پیش آئے۔مانگامنڈی سے خانیوال، روہڑی ٹول پلازہ سے ٹنڈو مستی تک دھند برقرار رہی۔

لاہور میں بھی دھند کے باعث ٹریفک کی روانی شدید متاثر ہوئی،مختلف شہروں میں جہاں ٹرانسپورٹ کےمسائل رہے وہیں ملازمین کو دفاتر جانے میں بھی شدید دشواری کا سامنا رہا۔