اسلام آباد میں گرین بیلٹ پر نادرا کا قبضہ


اسلام آباد(24نیوز)جنگلات کے بعد اب گرین بیلٹوں پر بھی قبضے ہونے شروع ہوگئے،نادرا ہیڈ کوارٹر گرین بیلٹ پر قبضہ کرنے والے اداروں میں سرفہرست ہے۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی دارالحکومت کے ماسٹر پلان میں سڑکوں کے ساتھ ایک کشادہ جگہ گرین بیلٹ کے لئے مختص کی گئی تھی۔ جس کا مطلب ماحول کو آلودہ ہونے سے بچانا اور شہر کی خوبصورتی میں اضافہ کرنا تھا۔ بدقسمتی سے یہ سب کچھ علامتی طور پر تو موجود ہے لیکن عملی طور ایسا نہیں۔جس کی بنیادی وجہ ان گرین بیلٹوں پر قبضہ اور تعمیرات ہیں۔ اس میں عام لوگ ملوث نہیں بلکہ بڑے بڑے سرکاری ادارے شامل ہیں۔

 دوسری جانب نادرا ہیڈ کوارٹر جو کہ ریڈ زون میں واقع ہے جس نے کئی کنال پرمشتمل گرین بیلٹ پر قبضہ کررکھا ہے۔ جبکہ نادرا ہیڈ کوارٹر سے ملحقہ گرین بیلٹ پر ڈی ایس پی سیکریٹریٹ کا دفتر تعمیر ہوچکا ہے ۔

 واضح رہے کہ دارالحکومت میں جنگلات اور گرین بیلٹوں پر قبضے سے ناصرف شہر کا قدرتی ماحول تباہ ہورہا ہے۔ بلکہ یہ قانون کی عملداری پر بھی ایک سوالیہ نشان ہے۔