صادق و امین کا پول کھل گیا، عمران خان کی بنی گالا رہائشگاہ کا این او سی جعلی


اسلام آباد (24 نیوز) ضلعی انتظامیہ نے بنی گالہ میں عمران خان کی رہائش گاہ غیر قانونی قرار دے دی۔ سپریم کورٹ میں پیش کیا جانے والا این او سی مبینہ طورپر جعلی نکلا۔ تحریک انصاف نے، ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر اور سیکرٹری یوسی بہارہ کہو کے بیانات جھوٹ کا پلندہ قرار دے دیا۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد انتظامیہ نے عمران خان کے گھر کی تعمیر کا این او سی جاری کرنے کی تردید کر دی۔ سپریم کورٹ میں بنی گالہ تجاوزات سے متعلق کیس میں اسلام آباد انتظامیہ نے رپورٹ پیش کی۔

یو سی بہارہ کہو کے سابق یو سی سیکرٹری محمد عمر نے تحریری بیان میں کہا ہے کہ عمران خان کو بنی گالہ میں گھر تعمیر کرنے کے لیے کوئی این او سی نہیں دیا گیا۔ عمران خان نے گھر کی تعمیر سے قبل کوئی نقشہ جمع نہیں کرایا۔

یہ بھی پڑھئے:  توہین عدالت کیس، نہال ہاشمی کو رہا کردیا گیا 

بنی گالا میں تجاوزات کے خلاف کیس میں اپنا تحریری بیان سپریم کورٹ میں جمع کرایا گیا ہے، محمد عمر کی جانب سے جمع کرائے گئے بیان میں کہا گیا کہ میں 2003ء میں یو سی بارہ کہومیں سیکرٹری تعینات تھا اور بنی گالہ میں عمران خان کی رہائش گاہ کی تعمیر کے حوالے سے درخواست پرمزید کارروائی کیلئے بنی گالہ کا نقشہ طلب کیا گیا تھا، عمران خان کی جانب سے نقشہ فراہم نہیں کیا گیا جس کے بعد مزید کوئی کارروائی عمل میں نہیں لائی گئی۔

ضلعی انتظامیہ کی ایک اور دستاویز میں انکشاف ہوا ہے کہ بنی گالہ میں زمین کی خریداری کے وقت وزارت داخلہ کا این او سی پیش نہیں کیا گیا۔

دستاویزات کے مطابق زمین خریداری کے وقت جمائما خان نے اپنا شناختی کارڈ بھی ظاہر نہیں کیا۔ جمائمہ خان زمین کے انتقال کے وقت ریوینیو افسر کے سامنے بھی پیش نہ ہوئیں۔

ضرور پڑھئے: خواتین نے پہاڑوں کی چوٹیاں سر کرنے کا عزم کرلیا

 معاملہ پر تحریک انصاف کے رہنما عامر کیانی نے اسلام آباد انتظامیہ کی رپورٹ کو نیا شوشہ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ انہوں نے بہارہ کہو یونین کونسل کے دفتر سے اجازت نامہ حاصل کیا تھا۔ عمران خان عدالت سے سرخرو ہو کر نکلیں گے۔

دوسری جانب سابق وزیراعظم نواز شریف کی صاحبزادی مریم نواز نے عمران خان کے بنی گالہ کے گھر کے این او سی کو جعلی قرار دینے پر ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ نوازشریف کی بات یاد آگئی جنہوں نے کہا تھا کہ عمران کو صادق اور امین قرار دینے والے ججوں کو سلیوٹ کرتا ہوں۔