لاپتہ افرادکے ورثاکی آہ وبکا،عدالت پولیس پر برہم

 لاپتہ افرادکے ورثاکی آہ وبکا،عدالت پولیس پر برہم


کراچی (24نیوز)کراچی کی عدالتوں میں لاپتہ افرادکے ورثاکی آہ وبکا، سندھ ہائیکورٹ پولیس پر برس پڑی، لاپتہ افراد کی عدم بازیابی سے متعلق درخواستوں پر ایک ماہ میں محکمہ داخلہ سندھ آئی جی سندھ سے جواب طلب کرلیا ۔

سندھ ہائیکورٹ میں لیاری گینگ وار کے محمد شاہد سمیت 60 سے زائد لاپتہ افراد کی عدم بازیابی سے متعلق درخواستوں پر سماعت ہوئی ،عدالت میں موجود 2 لاپتہ بچوں کی ماں کاکہناتھاکہ میرا دوبیٹے حنیف اورسہیل 4 ماہ سے لاپتہ ہیں عدالت سے انصاف کی امیدہے ،کمرہ عدالت میں آہ وبکاکرتے ہوئے غم سے نڈھال ماں کا مزید کہنا تھا کہ میرے دل پر کیا گزرتی ہے مجھے ہی پتہ ہے ۔

عدالت نے لاپتہ افراد کی عدم بازیابی پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ پولیس لاپتہ افرادکی بازیابی کیلئے موثر اقدامات اٹھائے اور دیگر صوبوں سے بھی مدد لے۔

کمرے عدالت میں موجود ایک اور لاپتہ شہری کی والدہ کاکہناتھاکہ میرے بیٹے محمد شاہد کو لیاری سے لاپتہ کیا گیا 1 سال گزر گیااس کا کچھ پتا نہیں چلا 

جس پر عدالت نے ریمارکس دیئے کہ ہم لاپتہ افراد کی بازیابی کیلئے کوششیں کر رہےہیں، عدالت نے محکمہ داخلہ،آئی جی سندھ اور دیگر فریقین سے ایک ماہ میں جواب طلب کرلیا۔

اظہر تھراج

Senior Content Writer