بھارتی فوجی افسران کے نئے جھوٹ



دہلی(24نیوز) بھارت کے تینوں مسلح افواج کے نمائندوں نے مشترکہ پریس کانفرنس کی جس کا اختتام ثبوت دکھانے کے حوالے سے صحافیوں کے سوالات اور بھارتی فوجی افسروں کی بوکھلاہٹ پر مبنی تھی۔

آرمی کےافسرسےپوچھا گیا کہ آپ نے بالاکوٹ پر حملہ کیا اس کا ثبوت کہاں ہے؟ پہلے تووہ بات گول کرنےکی کوشش میں رہے اور پھر یہ کہہ کرجان چھڑائی کہ بھارتی حکومت فیصلہ کرے گی کہ ثبوت کب دکھانے ہیں کب نہیں۔

350 افرادکی ہلاکت کے حوالے سے موصوف کا کہنا تھا کہ ہم یقینی طورپر تعداد کا نہیں بتاسکتے، جب پاکستان کا ایف 16 گرائے جانے سے متعلق سوال ہوا تو جے ایف تھنڈر17سے راجوری پر فائرکیے گئے میزائل کا ٹکرا دکھا کر کہا گیا کہ یہ میزائل صرف ایف 16 سے فائر کیا جاسکتا ہے۔

بھارتی فضائیہ کے نمائندے سے جب پوچھا گیا کہ بھارتی پائلٹ کی رہائی کے حوالے سے پاکستان کے جذبہ خیرسگالی پر آپ پاکستان کے لیے کیا کہیں گے تو موصوف آئی ایم ہیپی آئی ایم ہیپی کا ورد کرتے رہے اوراتنے میں بھارتی دفتر خارجہ کے اہلکار نے انہیں ایک طرف دھکیلتے ہوئے کہا کہ بھارتی حکومت اس کا جواب دے گی۔

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔