پاکستان میں پولیس کو غیر سیاسی کرنے کی ضرورت ہے: عمران خان


کراچی (24نیوز) پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین عمران خان کا کہنا ہے کہ کراچی کے علاقے ڈیفنس میں نوجوان انتظار حسین کو جان بوجھ کر نشانہ بنایا گیا، یہ کیس انسداد دہشت گردی عدالت میں چلنا چاہیے، پاکستان میں پولیس کو غیر سیاسی کرنے کی ضرورت ہے، عمران خان نے نوجوان انتظار حسین کے گھر آمد کے موقع پر ان کے والد سے ملاقات کی۔

تفصٰیلات ے مطابق عمران خان نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سی سی ٹی وی فوٹیج سے واضح ہے کہ انتظار کا قتل کیا گیا ہے، ان کا کہنا تھا کہ پنجاب و سندھ کی پولیس پر شہریوں کا کوئی اعتبار نہیں ہے، جب کہ خیبر پختونخوا کے لوگ محکمہ پولیس پر اعتبار کرتے ہیں۔

عمران خان نے کے پی کے پولیس کی مثال دیتے ہوئے کہا کہ مرادن میں قتل ہونے والی 4 سالہ بچی عاصمہ کے والد نے کہا کہ انہیں پولیس کی تفتیش پر اعتماد ہے جب کہ زینب کے والدین نے کہا کہ چیف جسٹس معاملے کا نوٹس لیں۔

ان کا کہنا تھا کہ کے پی کے کی پولیس مکمل طور پر غیر سیاسی ہے، وہاں سب میرٹ کی بنا پر کیا جاتا ہے ، پی ٹی آئی چیئرمین نے بتایا کہ دیگر صوبوں میں بھی پولیس ریفارمز ایکٹ لانا چاہتے ہیں تاکہ شہریوں کو پولیس سے تحفظ فراہم ہوسکے۔

عمران خان نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اگر انتظار کے والد کو پولیس پر بھروسہ نہیں ہے تو انہیں حق ہے کہ وہ جے آئی ٹی سے بات کریں۔