زینب کے والد امین انصاری کی ملزم کو سرعام پھانسی دینے کی استدعا


لاہور (24 نیوز) زینب کے والد امین انصاری نے چیف جسٹس آف پاکستان سے استدعا کی کہ ملزم کو سرعام پھانسی دی جائے، جس پر چیف جسٹس پاکستان نے ریمارکس دیئے کہ خواہش تو یہی ہے مگر قانون ایسا نہیں ہے۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں چیف جسٹس آف پاکستان نے زینب قتل کیس کے ازخود نوٹس کیس کی سماعت کی۔ دوران سماعت زینب کے والد نے چیف جسٹس آف پاکستان سے استدعا کی کہ ملزم کو سرعام پھانسی دی جائے، جس پر چیف جسٹس پاکستان نے ریمارکس دیئے کہ خواہش تو یہی ہے مگر قانون ایسا نہیں ہے۔ زینب آپ کی نہیں ہماری بچی ہے۔ کیس کو کسی طرح بھی نقصان نہیں ہونے دیں گے، جس پر زینب کے والد نے استدعا کی کہ اگر نااہل وزیراعظم کے لئے پارلیمنٹ قانون سازی کرسکتی ہے تو ملزم کو سرعام پھانسی دینے کا قانون بھی پاس کیا جائے۔

سپریم کورٹ نے ننھی زینب کے والد امین انصاری کو پولیس سیکیورٹی دینے کا حکم دیتے ہوئے ایڈووکیٹ جنرل پنجاب کو سیکیورٹی کے انتظامات کرنے کی ہدایت کردی۔