ایف آئی اے سر گرم،دوبڑی سیاسی جماعتوں کے خلاف گھیرا تنگ

ایف آئی اے سر گرم،دوبڑی سیاسی جماعتوں کے خلاف گھیرا تنگ


اسلام آباد(24نیوز)انتخابات ختم،حکومت سازی شروع،ایف آئی اے سر گرم،دوبڑی سیاسی جماعتوں کے خلاف گھیرا تنگ،وفاقی تحقیقاتی ادارے کے سربراہ نے افسروں کو گڑے مردے اکھاڑنے کا ٹاسک سونپ دیا۔

تفصیلات کے مطابق عام انتخابات مکمل ہوتے ہی وفاقی تحقیقاتی ادارے فیڈرل انویسٹی گیشن ایجنسی بھی سرگرم ہو گئی ہے۔ ایف آئی اے ذرائع نے بتایا ہے کہ پیپلز پارٹی کے خلاف مقدمات میں ایف آئی اے کی دلچسپی بڑھنے لگی ہے اس سلسلے میں ڈائریکٹر جنرل ایف آئی اے بشیر میمن نے کراچی کے افسروں کو خصوصی ٹاسک دے دیا ہے اور ایک مشاورتی اجلاس بھی طلب کیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں۔۔۔وزیر اعلیٰ پنجاب کی دوڑ میں ڈاکٹر یاسمین کی انٹری 

 ذرائع کے مطابق ایف آئی اے کا فوکس صرف دوبڑی سیاسی جماعتوں پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ (ن) کی شخصیات کے خلاف مقدمات پر زیادہ ہے۔ منی لانڈرنگ کیس میں سابق صدر آصف علی زرداری کی طلبی بھی اسی سلسلے کی ایک کڑی ہے جس میں ایف آئی اے نے سابق صدر آصف علی زرداری اور ان کی ہمشیرہ کو طلب کیا ہے۔

یہ بھی دیکھیں۔۔۔

سپریم کورٹ نے دونوں کو الیکشن تک طلب نہ کرنے کی ہدایت کی تھی۔ دونوں شخصیات کو کمرشل بنکنگ سرکل کی جانب سے منی لانڈرنگ کیس میں بیان ریکارڈ کرانے کے لئے طلب کیا گیا ہے۔ ذرائع دعوی کر رہے ہیں کہ اصغر خان کیس میں بھی آئیندہ چند روز میں بڑی پیشرفت کا امکان ہے ایک جانب تو ایف آئی اے کی دل چسپی غیرمعمولی ہے۔

یہ لازمی پڑھیں۔۔۔کون بنے گا نیا وزیراعلیٰ پنجاب؟ 

 دوسری جانب ایف آئی اے میں اہم عالمی نوعیت کے کیسز کی تحقیقات نظر انداز ہو رہی ہیں۔ ایف آئی اے میں عالمی اہمیت کا حامل ڈاکٹر عمران فاروق قتل کیس گزشتہ تین برسوں سے التوا کا شکار ہے  صورتحال یہ ہے کہ گزشتہ 3 برسوں سے ایف آئی اے تاحال اس مقدمے میں چالان بھی مرتب نہیں کر پائی۔