پاک سر زمین پارٹی نے ایم کیوایم پاکستان کی مزید 2 پتنگیں کاٹ دیں

پاک سر زمین پارٹی نے ایم کیوایم پاکستان کی مزید 2 پتنگیں کاٹ دیں


کراچی( 24نیوز )پاک سر زمین پارٹی نے ایم کیوایم پاکستان کی مزید 2 پتنگیں کاٹ دیں,رکنِ سندھ اسمبلی نائلہ منیر اور ناہید بیگم پی ایس پی کو پیاری ہوگئیں، مصطفیٰ کمال نے ایم کیوایم پی آئی بی اور بہادر آباد والوں کو مل کر کراچی کے لئے کام کرنے کی دعوت دے دی-

رکنِ سندھ اسمبلی نائلہ منیر اور ناہید بیگم نے پاک سرزمین پارٹی میں شمولیت کا اعلان کردیا،، پاکستان ہاؤس میں پی ایس پی کے سربراہ مصطفیٰ کمال نے پریس کانفرنس میں کہا کہ ایم کیوایم سے کوئی ذاتی دشمنی نہیں ہے,ایم کیوایم کا برانڈ خراب ہوگیا ہے،،بہادر آباد اور پی آئی بی والے ہمارے ساتھ آجائیں-
اس دوران پی ایس پی میں شامل ہونے والی ارکانِ سندھ اسمبلی نائلہ منیر اور ناہید بیگم کا کہنا تھ اکہ ایم کیوایم اب ذاتی جھگڑوں کے سوا کچھ نہیں بچا-مصطفیٰ کمال نے کہا کہ کراچی لا وارث نہیں اسکو لاورث سمجھنے والے احمقوں کی جنت میں رہتے ہیں-
دوسری جانب متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کے رہنما فاروق ستار کی زیر صدارت اراکین اسمبلی ایم کیو ایم پی آئی بی گروپ کا اجلاس ہوا،اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو میں فاروق ستار نے ایک بار پھر مصالحتی فارمولا پیش کیا،انہوں نے پارٹی سربراہ کے لیے الیکشن کرانے یا 30-35 رکنی رابطہ کمیٹی کے لیے الیکشن کرانے کی پیش کش کی۔

 یہ بھی ضرور پڑھیئے:”اب ایسا نہیں ہوگا“وزیر اعظم کی ملاقات کے بعد چیف جسٹس بول پڑے
فاروق ستار نے کہا کہ وہ الیکشن کمیشن کے فیصلے کے خلاف عدالت نہیں جانا چاہتے تاہم کارکنان نے عدالت سے رجوع کرنے کا مطالبہ کیا، کارکنوں کے مطالبے پر عدالت سے رجوع کریں گے لیکن عدالت نے حکم امتناع بڑھایا تو اس سے دست بردار ہوجائیں گے اور پتنگ کو لٹکنے نہیں دیں گے اور اس کی چھینا جھپٹی میں نہیں پڑیں گے۔
فاروق ستار نے کہا کہ پتنگ تو بہادر آباد والوں کو دی گئی لیکن ڈور کسی اور کے پاس ہے۔

 یہ بھی ضرور پڑھیئے:اسحاق ڈار ایک بار پھر فرد جرم سے بچ گئے
خیال رہے کہ گزشتہ روز الیکشن کمیشن نے متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کی کنوینرشپ کے تنازع سے متعلق دائر درخواستوں پر مختصر فیصلہ سناتے ہوئے کہا کہ فاروق ستار پارٹی کے کنوینر نہیں رہے،الیکشن کمیشن نے ایم کیو ایم پاکستان بہادرآباد گروپ کی درخواستیں منظور کرتے ہوئے فاروق ستار کی کنوینرشپ سے متعلق محفوظ کردہ مختصر فیصلہ سنایا۔