پاکستان 98 ارب ڈالر کا مقروض ہے، چیئرمین نیب

پاکستان 98 ارب ڈالر کا مقروض ہے، چیئرمین نیب


اسلام آباد(24نیوز) چیئرمین نیب جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال کا کہنا ہےکہ پاکستان 98 ارب ڈالرکا مقروض ہے، یہ قرضے کہاں لگائے گئے نظر نہیں آتے،غربت کی لکیر سے نیچے50 فیصد سے زائد لوگ زندگی گزار رہے ہیں۔

 نیب اعلامیہ کےمطابق چیئرمین نیب جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال نے نیب خیبرپختونخوا کی کارکردگی کا جائزہ لیا،ڈی جی نیب مجاہد اکبربلوچ نے چیئرمین نیب کوبریفنگ دی، چیئرمین نیب کاکہنا تھاکہ میگا کرپشن کے مقدمات انجام تک پہنچانا اولین ترجیح ہے،بلاتفریق کارروائی کے نتیجے میں 303ارب روپے قومی خزانے میں جمع کرائے۔

چیئرمین نیب نےکہا کہ پاکستان 98 ارب ڈالر کا مقروض ہے،یہ قرضے کہاں لگائے گئے،غربت کی لکیرسے نیچے 50 فیصد سے زائد لوگ زندگی گزار رہے ہیں۔ جاوید اقبال کا کہنا تھا کہ نیب ایسا کوئی اقدام نہیں اٹھائے گا جس سے ملکی معیشت کو نقصان ہو، بیوروکریسی ملک کی ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتی ہے،اگر بیورو کریسی فیصلےنہیں کرے گی تو ہم آگے کیسے چلیں گے،حکومت صرف پالیسی بناتی ہے،عملدرآمد بیوروکریسی کا کام ہے۔

چیئرمین نیب کا کہنا تھا کہ 1435 نیب ریفرنسز میں کچھ درجن ہی بیورو کریٹس شامل ہیں،کونسے ایسے بیوروکریٹس ہیں جن کو ایک دو بار سے زیادہ بلایا ہو،نیب تحقیقات میں نامزد زیادہ تر بیوروکریٹس تو ریٹائرڈ ہیں۔

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔