رانا ثناء اللہ کیخلاف آئین سے بغاوت کا مقدمہ درج کیا جائے: اشرف جلالی


لاہور (24 نیوز): ڈاکٹر آصف اشرف جلالی کہتے ہیں کہ رانا ثناء اللہ کے خلاف آئین سے بغاوت کا مقدمہ درج کیا جائے، ختم نبوت کی شق میں ترمیم کرنے والے جتنے بھی اراکین اسمبلی ملوث تھے انہیں تاحیات نااہل قرار دیا جائے۔

 

پنجاب اسمبلی کے باہر تحریک لبیک کا دھرنا چوتھے روز بھی جاری رہا، دھرنے میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے تحریک لبیک کے سربراہ ڈاکٹر آصف اشرف جلالی کا کہنا تھا کہ حکومت تیس دن کی بجائے فوری تحقیقات شروع کرے، آپریشن کا آرڈر دینے والوں اور کرنے والوں کے خلاف ایف آئی آر درج کی جائے۔ انہوں نے کہا کہ راجا ظفرالحق کی رپورٹ اور ختم نبوت کی ترمیم کرنے والے ماسٹر مائنڈ کے نام سامنے آنے چاہیں۔

 

ڈاکٹر آصف اشرف جلالی کا کہنا تھا کہ حکومت کی طرف سے مذاکرات کے لئے زعیم قادری نے رابطہ کیا ہے لیکن حکومت کی جانب سے رابطے میں سنجیدگی نہیں ہے۔ ہم جیل بھرو تحریک اور دیگر صوبوں میں دھرنے پروگرام شروع کرنے پر بھی غور کررہے ہیں۔

 

تحریک لبیک کے سربراہ نے فیض آباد معاہدے سے لاتعلقی کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ اس معاہدے کے لئے انکے ساتھ مشاورت نہیں کی گئی اور پتا نہیں انہوں نے دھرنا کیوں ختم کردیا۔