پاکستان اور آئی ایم ایف کا قرض معاہدہ 10مئی کو طے پانے کا امکان

پاکستان اور آئی ایم ایف کا قرض معاہدہ 10مئی کو طے پانے کا امکان


24نیوز: پاکستان اورآئی ایم ایف کےدرمیان مذاکرات شروع ہوگئے۔ مذاکرات کےپہلےمرحلے میں پاکستان نےآئی ایم ایف کوپانچ سوارب روپےسےزائدکےنئےٹیکسز لگانے کی یقین دہانی کرادی۔ آئی ایم ایف سےقرض معاہدہ دس مئی کوطےپانےکا امکان ہے۔

پاکستان نے آئی ایم ایف کو پانچ سو ارب روپے کے نئے ٹیکسز لگانے کی یقین دہانی کرادی۔ آئی ایم ایف کو یقین دہانی کرائی گئی ہےکہ نئے بجٹ میں ایف بی آر کا ہدف 4500 ارب روپےسےزائد مقررکیاجائےگا۔  رواں سال ایف بی آر 4100 ارب روپے کاٹیکس اکٹھاکرےگا۔ آئی ایم ایف سےقرض معاہدہ دس مئی کوطےپانےکاامکان ہے.

آئی ایم ایف مشن اورپاکستان کےدرمیان مذاکرات کاآغازہوگیا۔۔ آئی ایم ایف وفد نے پہلے روزوزارت خزانہ، ایف بی آر اور وزارت توانائی کےحکام سےمذاکرات کیے۔ آئی ایم ایف مشن کی سربراہی ارنستو ریگوکرہے ہیں۔  آئی ایم ایف کوبتایاگیاہےکہ پاکستان آمدن بڑھانےکی کوشش کررہاہے۔  تجارتی خسارے میں کمی ہورہی ہے جب کہ درآمدات کو روکا جارہا ہے۔ پاکستان کی جانب سےامیدکا اظہار کیا گیاکہ رواں سال جاری کھاتوں کاخسارہ کم ہوگا۔  آئی ایم ایف وفد کو بتایاگیاکہ پاکستان نےٹیکس اصلاحات اورتوانائی کےشعبہ میں تجاویزبھی تیارکرلی ہیں۔

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔