سائرہ نصیر قتل کیس، بیٹا فہد زیر حراست


حیدرآباد (24 نیوز) مسلم لیگ فنکشنل کی رہنما سائرہ نصیر کے قتل کی تحقیقات میں اہم پیش رفت ہوئی ہے۔ پولیس نے مقتولہ کے بیٹے فہد کو حراست میں لے لیا۔

تفصیلات کے مطابق فنکشنل لیگ کی رہنما سائرہ نسیم کو 7دسمبرکو بے دردی سےقتل کر دیا گیا تھا۔ قتل کے بعد ان کی لاش کو کار میں رکھ کر آگ لگا دی گئی تھی۔

پولیس نے اس قتل کی تفتیش میں اہم پیش رفت کرتے ہوئے مقتولہ کےبیٹے فہد کو حراست میں لے لیا ہے۔ پولیس نے سائرہ نصیر کے بیٹے فہد کو گزشتہ شب تفتیش کے لیے بلایا تھا جس کے بعد انہیں باقاعدہ طور پر حراست میں لے لیا گیا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ فہد کی اپنی والدہ سائرہ نصیر سے اکثر تلخ کلامی ہوتی رہتی تھی۔ پولیس نے شک کی بنیاد پر فہد کو شامل تفیش کیا۔

سائرہ نصیر کے بیہمانہ قتل نے خوف وہراس بھی پیدا کر دیا تھا۔ عوامی حلقوں کا کہنا ہے کہ ظلم کی اس داستان کے تمام کرداروں کو بے نقاب کر کے قرار واقعی سزا دی جائے۔