اسٹیل ملز کی بربادی، ذمہ داروں کے نام ای سی ایل میں ڈالنے کا فیصلہ


اسلام آباد (24 نیوز) چیئرمین قائمہ کمیٹی برائے صنعت و پیداوار اسد عمر کا کہنا ہے کہ پاکستان اسٹیل ملز کی بربادی کے ذمہ داروں کو بے نقاب کیا جائے۔ جولائی 2017 سے اسٹیل مل کی بندش پر نیب کے دروازے کھٹکٹانے کی کوشش کر رہے ہیں۔ 18 دسمبر کو تحقیقات کیلئے نیب کو دوبارہ خط بھی لکھا۔

قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے صنعت و پیداوار کا اجلاس ہوا جس میں پاکستان اسٹیل ملز کا معاملہ اٹھایا گیا۔ اس حوالے سے نیب حکام بھی حرکت میں نظر آئے۔ نیب نے پاکستان اسٹیل ملز کے نقصان کا نوٹس لے لیا۔ چیرمین نیب نے ذمہ داروں کا تعین کرنے کے لیے تحقیقات کا فیصلہ بھی کر لیا۔

قائمہ کمیٹی کے چیئرمین اسد عمر نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ادارے چوروں پر پردہ نہ ڈالیں۔ پچھلے اجلاس میں سیکرٹری صنعت سے پوچھا تھا کہ آپ کو نیند کیسے آتی ہے۔ ملازمین کوپنشنز نہیں مل رہیں۔ یہ ادائیگیاں ریاست کی ذمہ داری ہے۔

ذرائع کے مطابق کمیٹی اجلاس کے اختتام پر نیب نے اسٹیل ملز کی کرپشن کے خلاف انکوائری کا فیصلہ کیا۔ نیب اعلامیہ کے مطابق پاکستان اسٹیل ملز کی بربادی کے ذمہ داروں کے نام بھی ای سی ایل میں ڈالنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔