انسانی حقوق کی پامالی 2018ء میں بھی عروج پر رہی

انسانی حقوق کی پامالی 2018ء میں بھی عروج پر رہی


  24نیوز : درجنوں واقعات نے عوام کو شدید پریشان کئے رکھا، ننھی زینب اورمشال کے قتلوں کے لرزہ خیز واقعات اسی سال میں ہوئے۔

تفصیلات کے مطابق دوہزار اٹھارہ انسانی حقوق کے حوالے سے بھاری ثابت ہوا، قصور سمیت مختلف شہروں میں بچوں کے ساتھ زیادتیاں ہوئیں،  مشال کا بے رحمانہ قتل ہو یا ننھی زینب کے ساتھ درندگی کا واقعہ یہ سب کچھ سال 2018 کے حصے میں آیا، انسانی حقوق کی پامالیوں سے متعلق بدترین واقعات رونما ہوئے۔

ماہرین کے مطابق ملک میں میڈیا اور سوشل میڈیا کی وجہ سے انسانی حقوق کے واقعات کھل کر سامنے لائے گئے، بلوچستان اور قبائلی علاقوں میں میڈیا نہ ہونے کی وجہ سے انسانی حقوق کی پامالیوں کا اندازہ نہیں لگایا جاسکا۔ وزیر انسانی حقوق کا کہنا ہے کہ انسانی حقوق بالخصوص خواتین، بچوں اور اقلیتوں کے تحفظ کے لئے جامع اقدامات اٹھائے جارہے ہیں۔  اس سلسلے میں اب تک 9 قوانین کے مسودے تیار کئے جا چکے ہیں۔

شازیہ بشیر

Content Writer