رواں سال اسٹاک مارکیٹ کا احوال ۔۔۔

رواں سال اسٹاک مارکیٹ کا احوال ۔۔۔


کراچی ( 24 نیوز ) ملکی سیاست میں کشیدگی اور حکومتوں کی تبدیلی کے باعث اسٹاک مارکیٹ کے لیے سال 2018 مندی کا ہی سال رہا،  پاکستان اسٹاک ایکس چینج انڈیکس 8 فیصد گر گیا،  کاروبار ساڑھے 22 فیصد کم ہوا، سرمایہ کاروں کے 890 ارب روپے ڈوب گئے۔

تفصیلات کے مطابق سال کے دوران پاکستان اسٹاک ایکس چینج کے بینچ مارک ہنڈرڈ انڈیکس میں 3 ہزار 304 پوائنٹ کی کمی ریکارڈ کی گئی،  جنوری سے دسمبر تک ہنڈرڈ انڈیکس 40 ہزار 471 سے کم ہو کر 37 ہزار 167 پر آ گیا، سال کے دوران اسٹاک ایکس چینج میں سرمایہ کاری پر اوسطا پاکستانی روپے میں 5 فیصد خسارہ ہوا جبکہ ڈالر میں نقصان 25 فیصد تک پہنچ گیا۔

دوسری جانب 12 ماہ میں پاکستان اسٹاک میں شئیرز کی مجموعی مالیت 8 کھرب 89 ارب روپے کی کمی سے 76 کھرب 81 ارب روپے رہ گئی جبکہ کاروبار میں کمی کے باعث اوسطا یومیہ 19 کروڑ 32 لاکھ شئیرز کا ہی کام ہوا جو گزشتہ پانچ سال میں کم ترین کاروباری حجم ہے، بارہ ماہ کے دوران غیر ملکی سرمایہ کاروں نے مارکیٹ سے 50 کروڑ ڈالر نکال لیے،  2012 کے بعد پہلی مرتبہ مارکیٹ میں غیر ملکی سرمایہ کاری میں سے اتنا زیادہ انخلا دیکھا گیا۔

Malik Sultan Awan

Content Writer