پنجاب فوڈ اتھارٹی نےچھالیہ کے استعمال پر پابندی عائد کر دی


لاہور(24نیوز) پنجاب فوڈ اتھارٹی نے پان میں استعمال ہونے والے چھالیہ پر پابندی عائد کردی، کاروبار سے منسلک افراد کو فروخت بند کرنے کیلئے 3 ماہ کی مہلت دے دی، فوڈ ایکسپرٹ ڈاکٹر شفا نے کہا،چھالیہ انسانی صحت کیلئے انتہائی نقصاندہ ہے۔

تفصیلات کے مطابق پنجاب فوڈ اتھارٹی نے سائنٹفک پینل کی سفارشات پر چھالیہ پر مکمل پاندی عائد کر دی ہے۔سائنٹفک پینل رپورٹ کے مطابق چھالیہ منہ، گلے، معدے کے سرطان کا باعث بنتی ہے۔ فوڈ اتھارٹی نے چھالیہ کے کاروبار کرنے والوں کو اس کی فروخت بند کرنے کے لیے 31اپریل تک کی مہلت دی ہے۔ فوڈ ایکسپرٹ ڈاکٹر شفا نے ٹوینٹی فور نیوز سے گفتگو میں بتایا کہ چھالیہ بنیادی طور پر انسانی صحت کیلئے نقصاندہ ہے۔ اس کے استعمال سے لوگ کینسر جیسے موذی مرض میں مبتلا ہوجاتے ہیں۔

دوسری جانب چھالیا فروخت کرنے والے افراد کے مطابق چھالیا برصغیر کی ثقافت کا حصہ ہے۔ اس کے بند ہونے سے کافی مسائل پیدا ہوں گے۔ جبکہ پنجاب فوڈ اتھارٹی نے مہلت ختم ہونے پر چھالیہ بیچنے والوں کیخلاف کارروائی کا بھی اعلان اور عوام سے چھالیہ کا استعمال ترک کرنے کی اپیل کی ہے۔ واضح رہے کہ پی ایف اے نے چھالیا کو پیسے کا ضیاع اور صحت کیلئے خطرناک قرار دیا ہے۔جبکہ چھالیہ کے کاروبار سے منسلک افراد اس فیصلے کو بے روزگاری میں اضافے کا سبب قرار دیتے ہیں۔