گھریلو ملازمہ اور اس کی ماں پر پولیس کا تشدد


گوجرانوالہ(24نیوز)  تھانہ اروپ میں گھریلو ملازمہ اور اس کی والدہ پر تشدد ، تھانیدار اور لیڈی کانسٹیبل گرفتار کرکے مقدمہ درج کرلیا گیا، گھریلو ملازمہ پر تشدد کی میڈیکل رپورٹ بھی جاری کر دی گئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق گوجرانوالہ ڈی ایچ کیوا اسپتال میں زیر علاج گھریلو ملازمہ انیسہ 2 روز قبل تھانہ اروپ پولیس نے چوری کے الزام میں پہلے گرفتار کیا، پھر شدید تشدد کا نشانہ بنایا۔ گھریلو ملازمہ نے اپنے بیان میں بتایا کہ تشدد کے دوران اسے چوری ماننے پر مجبور کیا گیا۔ پولیس تشدد کا شکار ہونے والی انیسہ کے لواحقین کا کہنا ہے کہ بمبانوالی کے چودھری اکرم نے انکے خلاف من گھڑت اور جھوٹا مقدمہ درج کرایاہے۔ پولیس سے ساز باز کرکے ماں بیٹی پر تشدد کیا گیا۔

دوسری جانب ڈی ایچ کیو اسپتال کے میڈیکل افسروں کا کہنا تھا کہ گھریلو ملازمہ کی ٹانگوں اور ہاتھوں پر تشدد کے نشان ہیں۔ ملازمہ پر تھانہ میں تشدد کا واقعہ حکام نے بھی نوٹس لے لیا۔ جس کے بعد تھانیدار شہزاد قمر اور لیڈی کانسٹیبل کے خلاف مقدمہ درج کرلیا گیا۔