بھارتی عدالت نے محبت کرنے کی آزادی دے دی

بھارتی عدالت نے محبت کرنے کی آزادی دے دی


نئی دہلی(24نیوز) بھارتی جج نےبیٹی کومحبت کےجرم میں قید کیا توعدالت نےلڑکی کومحبت کی آزادی کاحق دیتے ہوئےقید سےبھی آزادی کاحکم سنا دیا۔

تفصیلات کے مطابق اپنی بیٹی کی محبت سے ناراض ضلع جج نے اپنے گھر میں اسے نظر بند کر رکھا تھا۔سوشل میڈیا پرخبرشائع ہوئی توپٹنہ ہائی کورٹ نےواقعہ کانوٹس لے کرلڑکی کی آزادی کاحکم جاری کردیا۔ معاملے میں فیصلہ سناتے ہوئے ہائی کورٹ نےحکم دیا کہ 15 دنوں کے لیے اس لڑکی کے لیے علیحدہ رہائش کا انتظام کیاجائے۔

یہ بھی لازمی پڑھیں:ووٹ کی اہمیت اجاگر کرنے کیلئے24 نیوز میدان میں آگیا 

 علاوہ ازیں عدالت نےلڑکی کی سیکیورٹی کے لیےخواتین کانسٹیبل کی تعیناتی کاحکم بھی جاری کردیا جبکہ لڑکی کواس لڑکےسےملنے کی اجازت بھی ہوگی جسےوہ پسند کرتی ہے۔ قانون کےشعبہ میں گریجویٹ لڑکی دہلی کے ایک نوجوان سے محبت کرتی ہے۔لڑکی کےاہل خانہ کوبیٹی کی محبت کا علم ہوا تو انہوں نےاسےگھرمیں نظر بند کردیا تھا۔