وزیر اعلیٰ  بلوچستان نے وفاقی حکومت کے خلاف طبل جنگ بجا دیا

وزیر اعلیٰ  بلوچستان نے وفاقی حکومت کے خلاف طبل جنگ بجا دیا


اسلام آباد (24 نیوز) وزیراعظم کے چیئرمین سینیٹ کے خلاف بیانات اور ملاقات سے انکار پر وفاقی اوربلوچستان حکومت کے درمیان محاذ آرائی بڑھنے لگی۔ وزیراعلیٰ بلوچستان نے اسلام آباد کی جانب مارچ کا اعلان کردیا۔

24 نیوز کے مطابق ووٹ کو عزت دو کا نعرہ لگانے والی لیگی حکومت بلوچستان میں عوامی مینڈیٹ کو تسلیم کرنے کو تیار نہیں۔ ن لیگ نے جب عبدالقدوس بزنجو کوصوبائی اسمبلی کا ڈپٹی سپیکرمنتخب کرایا تو ان میں کوئی خرابی نہیں تھی۔

یہ بھی پڑھئے: آنے والے فریاد سنانے آئے تھے ہم نے کچھ نہیں دیا، چیف جسٹس 

مگرجب انہوں نے لیگی وزیراعلیٰ کی آمرانہ سوچ کے خلاف بغاوت کی تو وہ برے بن گئے۔ وزیراعظم شاہد خاقان عباسی بلوچستان کے وزیراعلیٰ کے خلاف ہی نہیں بولے بلکہ انہوں نے سینیٹ کے نومنتخب چیئرمین صادق سنجرانی کے انتخاب کو بھی ہارس ٹریڈنگ کا نتیجہ قراردے دیا۔

تنگ آمد بجنگ آمد کے مصداق اب بلوچستان کے وزیراعلیٰ نے بھی وفاقی حکومت کے خلاف طبل جنگ بجاتے ہوئے وزیراعظم سے معافی یا بصورت دیگراسلام آباد کی جانب مارچ کا اعلان کر دیا ہے۔

پڑھنا نہ بھولئے: وزیر اعظم چیف جسٹس کے بیان پر وضاحت طلب کرسکتے ہیں، نواز شریف

وفاقی حکومت کے خیبرپختونخوا اورسندھ کی حکومتوں کے ساتھ پہلے ہی معاملات ٹھیک نہیں۔ اب بلوچستان کی حکومت کےساتھ محاذآرائی نہ تو قومی مفاد میں ہے اورنہ اس میں ن لیگ کا کوئی فائدہ ہے۔

جبکہ دوسری جانب تاحال وزیراعظم سینیٹ الیکشن میں ہارس ٹریڈنگ کا ثبوت سامنے نہیں لا سکے۔