الیکشن کمیشن نے سیاسی جماعتوں کو انتخابی نشانات الاٹ کر دئیے

الیکشن کمیشن نے سیاسی جماعتوں کو انتخابی نشانات الاٹ کر دئیے


اسلام آباد(24نیوز) الیکشن کمیشن نے سیاسی جماعتوں کا انتخابی نشان الاٹ کرنا شروع کر دئیے، مسلم لیگ ق سائیکل کے انتخابی نشان سے دستبردار ہوگئی، ٹریکٹر کا نشان الاٹ کر دیا گیا، پیپلز پارٹی کو تلوار کا نشان الاٹ کیا گیا،ن لیگ،تحریک انصاف، پیپلزپارٹی پارلیمنٹرینز اور ایم کیو ایم پاکستان کے پرانے نشان ہی برقرار رکھے گئے۔

تفصیلات کے مطابق الیکشن کمیشن نے 2018 کے عام انتخابات کیلئے تمام سیاسی جماعتوں کو انتخابی نشان الاٹ کردیئے گئے۔ الیکشن کمیشن نے بغیر کسی اعتراضات والی جماعتوں کو ان کی مرضی کے نشانات الاٹ کئے اور کئی جماعتوں کے انتخابی نشان برقرار رکھے گئے۔ پیپلزپارٹی پارلیمنٹرینز کو تیر، تحریک انصاف کو بلا، مسلم لیگ ن کوشیر، ایم کیوایم پاکستان کوپتنگ، متحدہ مجلس عمل کو کتاب کا انتخابی نشان الاٹ کیا۔ اے این پی کو لالٹین، پختونخوا ملی عوامی پارٹی کو درخت، پاکستان عوام لیگ کوانسانی ہاتھ، متحدہ قبائل پارٹی کو پگڑی، پاکستان تحریک انسانیت کو کنگھی، پاکستان عوامی لیگ کو ہاکی، پاکستان متحدہ علماء و مشائخ کونسل کوبیل انتخابی نشان الاٹ کیا گیا۔ نیشنل پارٹی کو آری، پیر پگاڑا کے گرینڈ ڈیمو کریٹک الائنس کو ستارہ جبکہ عوامی مسلم لیگ کو قلم دوات کا انتخابی نشان الاٹ ہو گیا۔

یہ بھی لازمی پڑھیں:محکمہ داخلہ نےحساس ترین پولنگ سٹیشنز کی نشاندہی کر دی 

 واضح رہے کہ الیکشن کمیشن نے دلائل سننے کےبعد پاکستان پیپلزپارٹی کوتلواراورمسلم لیگ ق کوٹریکٹرکا انتخابی نشان الاٹ کیا۔ ق لیگ سائیکل اور پاکستان پیپلزپارٹی دو تلوار کے نشانات سے دستبردار ہوگئیں۔ الیکشن کمیشن نے پاکستان کسان اتحاد کو ہل پاکستان پیپلزپارٹی ورکرز کو وکٹری کا نشان الاٹ کیا۔ الیکشن کمیشن انتخابی نشانات سے متعلق حتمی فہرست بھی جاری کرے گا۔