سعودی شہزادہ متعب بن عبداللہ ایک ارب ڈالر دینے پر رہا


ریاض (24 نیوز): سعودی عرب میں بھی پلی بارگیننگ شروع، کرپشن کے الزامات میں گرفتار نیشنل گارڈ کے سابق سربراہ شہزادہ متعب بن عبداللہ کوایک ارب ڈالر دینے پر رہا کردیا گیا۔

ذرائع کے مطابق کرپشن مہم کے دوران سعودی عرب میں چار نومبر کو کئی شہزادوں، وزراء اور سرمایہ کاروں کو گرفتار کیا گیا تھا جن میں نیشنل گارڈ کے سابق سربراہ متعب بن عبداللہ بھی شامل تھے۔ شہزادہ متعب بن عبداللہ پر کرپشن کے ذریعے ناجائز دولت اکٹھی کرنے کا الزام تھا۔

سعودی حکام کے مطابق کرپشن کے الزامات میں گرفتار نیشنل گارڈ کے سابق سربراہ شہزادہ متعب بن عبداللہ کو ایک ارب ڈالر واپس کرنے کے سمجھوتے پر رہا کیا گیا۔

یادرہے کہ متعب بن عبداللہ سابق سعودی فرمانروا شاہ عبداللہ کے صاحبزادے ہیں، انہیں گرفتاری سے تھوڑی دیر قبل ہی عہدے سے ہٹا دیا گیا تھا۔

مغربی میڈیا کے مطابق  سعودی عرب میں کرپشن کے الزام میں گرفتار مزید 3 شخصیات نے رہائی کیلئے ڈیل کرلی ہےمگر ان کے نام ظاہر نہیں کیے گئے۔