پیرحمیدالدین سیالوی کا دوٹوک جواب، زعیم قادری کا مشن آف سیال شریف ناکام


سرگودھا(24 نیوز): پنجاب حکومت کے وزیر مذہبی امور زعیم قادری کا مشن آف سیال شریف ناکام ہو گیا۔ پیر حمید الدین سیالوی نےزعیم قادری کو دو ٹوک جواب دیتے ہوئے کہا کہ رانا ثنااللہ تحفظات دور کرنے سیال شریف آئیں، قوم سے معافی مانگیں، دوبارہ کلمہ پڑھیں۔

تفصیلات کے مطابق زعیم قادری پیر آف سیال شریف حمید الدین سیالوی کے صاحبزادے رکن پنجاب اسمبلی غلام نظام الدین سیالوی کو منانے آستانہ عالیہ سیال شریف پہنچے، لیکن صوبائی وزیر قانون رانا ثناءاللہ کے نام ایک حکم لے کر لوٹ آئے۔

پیرحمیدالدین سیالوی نے صوبائی وزیر زعیم قادری کو کہا  کہ رانا ثنااللہ اپنے استعفے کے ہمراہ یہاں آئیں، اپنے عقائد ہمیں بتائیں۔ انہوں نے مطمئن کر لیا تو استعفے نہ دیں ورنہ سمجھ لیں پانی پلوں کے نیچے سے گزر گیا۔

پیر حمید الدین سیالوی نے انہیں متنبہ کیا کہ اگر حکومت نے ان کے مطالبات تسلیم نہ کئے تو ان کے پاس41 سے زائد ارکان قومی وصوبائی اسمبلی کے استعفے موجود ہیں جنہیں کوئی روک نہیں سکتا۔

24 نیوز سے گفتگو میں زعیم قادری نے اس بات کی تصدیق کر دی کہ پنجاب حکومت نے صوبائی وزیر مذہبی اُمور سید زعیم حسین قادری کو ٹاسک سونپا ہے۔انہوں نے کہا کہ میرا مشن پیر حمید الدین سیالوی کو اعتماد میں لینا تھا اور انہیں حکومت اور تحریک لبیک کے مابین طے پانے والے معاہدہ سے آگاہ کرنا تھا کہ حکومت ہرگز ختم نبوت قانون میں کسی قسم کی ترمیم نہیں کر رہی۔

زعیم قادری نے کہا کہ پیر حمید الدین سیالوی ہمارے سر کا تاج ہیں، اُن کا جو بھی حکم ہے مانا جائے گا۔

 واضح رہے کہ نون لیگ کے 4 ایم این ایز شیخ محمد اکرم، غلام محمد لالی، حامد حمید، ذوالفقار بھٹی اور 5 ایم پی ایز، وارث کلو، مولانا رحمت اللہ، عبدالرزاق ڈھلوں، محمد خان بلوچ اور رانا منور غوث نے اپنے استعفے پیر حمیدالدین سیالوی کوپیش کر دیئے۔

سوال یہ ہے کہ راناثنااللہ اس معاملے کو ٹھنڈا کریں گے یا پھر معاملہ آنے والے دنوں میں گرم ہی رہے گا۔