قطری شہزادے کی اچانک پاکستان آمد، کئی سوالات نے جنم لے لیا


لاہور (24 نیوز): قطری شہزادے شیخ حماد بن جاسم بن جابر کی اچانک پاکستان آمد نے بہت سے نئے سوالات کو جنم دے دیا، وہ ایک ایسے وقت میں نواز شریف سے ملنے آئے جب پیراڈائز لیکس میں خود اُن کا نام آگیا۔

 

 تفصیلات کےمطابق قطری شہزادے شیخ حماد بن جاسم بن جابر ہوا کے دوش پر آئے اور روانہ ہوگئے، ان کے ہمراہ سیف الرحمن المعروف احتساب الرحمن بھی تھے، دونوں سیدھے جاتی اُمرا پہنچے اور گیارہ بجے آنے والے دو بجے پاکستان سے روانہ بھی ہوگئے، اس تین گھنٹے کے دورے میں جاتی امرا میں کیا کچھ ہوا، ابھی کُچھ خبر نہیں۔ پیراڈائز لیکس میں قطری شہزادے حماد بن جاسم شہزادے کا نام بھی ہے، نواز شریف اور قطری شہزادے کی ملاقات نے کئی سوالات اُٹھا دیئے ہیں۔

پہلایہ کہ قطری شہزادہ کیوں آیاَ؟ کیا وہ عدالت میں نوازشریف کی بے گناہی پر بیان دینے پر آمادہ؟

دوسرا سوال یہ کہ کیا  قطری شہزادے کو  بھی پیرا ڈائیز لیکس سے نکلنے کے لیے شریفوں سے کسی خط کی ضرورت ہے، مگر سیف الرحمن کی آمد بتاتی ہے کہ معاملہ دوطرفہ ہے۔