کراچی میں جرائم کی شرح میں ہوشربا اضافہ، سی پی ایل سی کی رپورٹ جاری

کراچی میں جرائم کی شرح میں ہوشربا اضافہ، سی پی ایل سی کی رپورٹ جاری


کراچی (24 نیوز): کراچی میں فائرنگ، اسٹریٹ کرائم اور پرتشدد واقعات میں اضافہ ہو گیا۔ گیارہ ماہ کے دوران 350 سے زائد افراد موت کے گھاٹ اتار دیئے گئے، جرائم پیشہ عناصر گھروں کی دہلیز تک پہنچ کر شہریوں کو لوٹنے لگے۔ سی پی ایل سی نے رپورٹ جاری کر دی۔

شہر قائد میں جرائم کے اعداو شمار جاری کردیئے گئے، رواں سال گیارہ ماہ کے دوران جرائم کی شرح میں ہوشربا اضافہ دیکھا گیا ہے، سی پی ایل سی کی جانب سے جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق گیارہ ماہ کے دوران 350 شہری اپنی جان سے ہاتھ دھو بیٹھے ، 27 ہزار 219 شہریوں کو موبائل فون سے محروم کر دیا گیا جبکہ 23 ہزار 553 شہری اپنی موٹرسائیکلوں سے ہاتھ دھو بیٹھے، 12 سو 94 شہری اپنی قیمتی کاروں سے محروم کر دیئے گئے۔

 رپورٹ کے مطابق اغواء برائے تاوان کے دس واقعات رپورٹ کیے گئے جبکہ کراچی کے 58 شہریوں نے بھتہ خوری کی شکایات درج کروائیں۔ بینک ڈکیتوں نے بھی کراچی میں 8 بینکوں پر اپنے ہاتھ صاف کیے۔

 دوسری جانب پولیس ذرائع کا کہنا ہے کہ رواں سال قتل اور زخمی ہونے کے زیادہ تر واقعات ڈکیتی مزاحمت پر پیش آئے، جرائم کی 90 فیصد سی سی ٹی وی فوٹیجز پولیس عام شہریوں سے حاصل کرتی ہے، پولیس اور کے ایم سی کی جانب سے نصب کیمروں کا رزلٹ معیاری نہیں ہوتا۔