تحریک لبیک کا پنجاب اسمبلی کے سامنے دھرنا پانچویں روز بھی جاری


لاہور(24نیوز): تحریک لبیک نے پنجاب اسمبلی کے سامنے دھرنا پانچویں روز بھی جاری رکھا، تحریک لبیک نے عید میلاد النبی پنجاب اسمبلی کے باہر ہی منانے کا اعلان کردیا۔ اشرف آصف جلالی کہتے ہیں کہ اگر مطالبات تسلیم نہ ہوئے تو ایک گھنٹے کے نوٹس پر ملک کا پہیہ جام کردیں گے۔

تحریک لبیک کا پنجاب اسمبلی کے باہر دھرنا پانچویں روز بھی جاری رہا۔ دھرنے میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے تحریک لبیک کے سربراہ ڈاکٹر اشرف آصف جلالی کا کہنا تھا کہ ن لیگ حکومت کی مت ماری گئی ہے ، انہیں بتانا پڑے گا کہ ختم نبوت میں ترمیم کرنے کی کوشش کرنے والے ماسٹر مائنڈ کون ہیں۔ انہوں نے کہا کہ راجہ ظفرالحق کی رپورٹ منظر عام پر لائی جائے اور اب رانا ثناء اللہ کا استعفی ہی نہیں چاہئے بلکہ انکے خلاف آئین سے بغاوت کا مقدمہ درج کرنے سے ہی بات بنے گی، حکومت کو ابھی شائستہ لہجے میں مطالبات کی منظوری کا کہہ رہے ہیں اگر مطالبات نا مانے گئے تو پورے ملک میں ایک گھنٹے میں پہیہ جام کردیں گے۔

تحریک لبیک کے سربراہ نے علامہ خادم حسین رضوی کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ وہ بتائیں کہ جب انہیں یہ بات معلوم تھی کہ فیض آباد آپریشن میں کئی افراد شہید ہوئے ہیں تو انہوں نے کس منہ کے ساتھ حکومت سے مذاکرات کیے ، ایف آئی آر درج کرانا کس کی ذمے داری تھی ۔