بھارت سمیت تمام ہمسائیوں سے اچھے تعلقات چاہتے ہیں: وزیر خارجہ


اسلام آباد ( 24نیوز )وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ عمران خان کا شکریہ ادا کرتاہوں کہ انھوں نے مجھے پاکستان کے وکیل کے طور پر وزیر خارجہ کا عہدہ سونپا، حکومت کا  پیغام امن کا ہے. بھارت سمیت تمام ہمسایہ ممالک سےاچھے تعلقات قائم کرنا چاہتے ہیں۔

شاہ محمود قریشی   کا اسلام آباد جناح کنونشن سنٹر میں خطاب کرتے ہوئے کہنا تھا کہ حکومت ملی تو تنہا کرنے کی سازش کی گئی،  گزشتہ پانچ سال میں سے ساڑھے چار سال کسی نے پاکستان کا مقدمہ ہی نہیں لڑا۔  اقتدار سمبھالتے ہی سب سے پہلے افغانستان میں امن پر توجہ دی، خطے میں امن ہماری ضرورت ہے، ہم چاہتے ہیں افغانستان میں امن ہو۔

 ہندوستان کے ساتھ ہمارا اتار چڑھاؤ کسی سے ڈھکا چھپا نہیں۔ عمران خان نے ہدایت کی کہ  خطے میں امن قائم کرنا ہے۔ کرتار پور بارڈر کھول کر عمران خان نےدنیا کے سامنے امن کی مثال قائم کردی،  عمران خان نے گگلی پھینکی تو بھارت نے 2 وزیرکرتارپور بھیج دیئے۔ سشماسوراج سے ملاقات نہ ہونا اندرونی سیاست ہے،  بھارت اور پاکستان کے درمیان مذاکرات کو سیاست کی وجہ سے آگے نہیں بڑھ رہے۔ان کا مزید کہنا تھا کہ مسئلہ کشمیر کا حل ہماری اولین ترجیح ہے، کشمیریو سن لو، ہم تمہارے ساتھ ہیں۔

تیسرا ہمسایہ ملک ایران ہے،  حکومت نے ایران کے ساتھ اچھے تعلقات قائم کرنے ہیں، دو نشستیں ایران سے ہوچکی ہیں۔ بہت سے لوگ چاہتے ہیں کہ ایران اور پاکستان میں دراڑیں پیدا ہوں۔  چین چوتھا  ہمسایہ ملک ہے،  چین سے متعلق بہت انگلیاں اٹھیں، سی پیک پراپیگنڈا کیا گیا لیکنچین نے سی پیک پر ہمارے موقف کی تصدیق کی۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ امریکہ کو پاکستان نے بھرپور  جواب دیا ہے۔ وزیراعظم نے بھی  ٹرمپ کے ٹویٹ کا مؤثر انداز میں جواب دیا ہے۔ سعودی عرب اور یو اے ای سے تعلقات کو سردمہری سے نکالا، سعودی اور متحدہ عرب امارات سے منفرد پیکیج ملا جس کے باعث روپے کو ڈالر کے مقابلے میں تقویت ملی۔ دفتر خارجہ کو مزید متحرک کریں گے۔