افغان صدر سے بات کرنا وقت کاضیاع ہے، طالبان نے مذاکرات کی پیشکش ٹھکرا دی

افغان صدر سے بات کرنا وقت کاضیاع ہے، طالبان نے مذاکرات کی پیشکش ٹھکرا دی


کابل ( 24 نیوز ) افغان طالبان نے صدر اشرف غنی کی جانب سے مذاکرات کے لیے کمیٹی کےقیام کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ افغان صدر سے بات کرنا وقت کا ضیاع ہے۔

تفصیلات کے مطابق افغان طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے جمعرات کو ایک بیان میں کہا ہے کہ طاقت سے محروم اور غیر ملکیوں کے مسلط کردہ عناصر سے بات کرنا لاحاصل ہے کیوں کہ کمزور فریق فیصلہ کرنے کی قوت نہیں رکھتے۔ بیان میں طالبان ترجمان نے کہا ہے کہ طالبان کی لڑائی امریکی حکومت سے ہے اور وہ اسی کے ساتھ بات چیت کر رہے ہیں۔

دوسری جانب طالبان کا یہ بیان افغان حکومت کے لیے ایک اور دھچکا ہے جو ماضی میں بھی بارہا طالبان کو مذاکرات کی پیشکش کرچکی ہے لیکن طالبان ہمیشہ اس کے ساتھ مذاکرات کے امکان کو مسترد کرتے آئے ہیں۔ یاد رہے بدھ کو جنیوا میں جاری ایک بین الاقوامی کانفرنس سے خطاب کے دوران افغان صدر نے طالبان سے مذاکرات کے لیے 12 رکنی اعلیٰ کونسل کے قیام کا اعلان کیا تھا۔